اسد عمر عبوری ضمانت

سائفر کیس میں اسد عمر کی عبوری ضمانت میں 14 ستمبر تک توسیع

سائفر کیس میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما اور سابق وزیر خزانہ اسد عمر کی عبوری ضمانت میں 14 ستمبر تک توسیع کر دی گئی۔
ویب ڈیسک: اسلام آباد کی سیکرٹ ایکٹ کورٹ نے سائفر کیس کی سماعت کی جس سلسلے میں اسد عمر عدالت میں پیش ہوئے۔
دوران سماعت وکیل صفائی بابر اعوان نے عدالت کو بتایا اسد عمر دوبار ایف آئی اے کے سامنے شامل تفتیش ہوچکے ہیں۔
بعد ازاں عدالت نے سائفر کیس میں اسد عمر کی 14 ستمبر تک ضمانت قبل از گرفتاری میں توسیع کر دی اور پی ٹی آئی کے سابق جنرل سیکرٹری کو ایف آئی اے کے سامنے شاملِ تفتیش ہونے کا حکم دیا ہے۔
دوسری جانب عدالت کے باہر میڈیا سے غیر رسمی گفتگو میں اسد عمر نے کہا کہ سائفر گمشدگی سے متعلق چیئرمین پی ٹی آئی تفصیلی جواب دے چکے ہیں اور ایف آئی اے کو بھی سائفر کے متعلق بتا چکے ہیں۔
ایک سوال کے جواب میں اسد عمر نے کہا کہ مجھے تو چیئرمین پی ٹی آئی ڈکٹیٹر نظر نہیں آئے۔
انہوں نے کہا کہ عمران خان سے ہمارے وائس چیئرمین کو نہیں ملنے دیا گیا، صرف وکلاء کو ملنے کی اجازت ہے۔
اسد عمر کا کہنا تھا کہ امید ہے توشہ خانہ کیس کا فیصلہ اچھا آئے گا۔

مزید پڑھیں:  مردان میں دوبرقعہ پوش خواتین کی فائرنگ سے رکشہ ڈرائیور قتل