مالی مشکلات کا شکار متعدد جامعات نے فیسیں بڑھا دیں

ویب ڈیسک: مالی مشکلات کا شکار جامعات نے اخراجات پورے کرنے کے لئے فیسوں میں اضافہ کردیا، ذرائع کے مطابق خیبرپختونخوا کی متعدد جامعات نے فیسیں بڑھا دیں، اسلامیہ کالج یونیورسٹی پشاور، جامعہ پشاور، کے ایم یو اور زرعی یونیورسٹی کی فیسیں بڑھا دی گئیں۔
اس سلسلے میں جاری ہونے والی دستاویزات کے مطابق اسلامیہ کالج انتظامیہ نے ہاسٹلز فیسوں میں بھی 3 ہزار روپے کا اضافہ کردیا۔ اسلامیہ کالج میں اوپن میرٹ پر پری میڈیکل کی فیس 45 ہزار سے بڑھا کر 49 ہزار 465 روپے کردی گئی۔
ذرائع کے مطابق سیلف فنانس پر پری میڈیکل کی فیس میں 13 ہزار روپے کا اضافہ کر دیا گیا جس کے بعد فیس 98 ہزار روپے سے بڑھ کر 1 لاکھ 11 ہزار روپے کر دی گئی۔
پری انجنیئرنگ میں 5 ہزار روپے کے اضافے کے بعد فیس 47 ہزار روپے ہوگئی، 4 سالہ بی ایس پروگرام میں بھی 5 ہزار روپے فی سمسٹر کا اضافہ کر دیا گیا ہے۔
ذرائع کے مطابق ایم فل کی فیس 5 ہزار اور پی ایچ ڈی کی فیس میں فی سمسٹر7 ہزار روپے اضافہ کردیا گیا، جامعہ پشاور نے بھی بی ایس، ماسٹرز، ایم فل اور پی ایچ ڈی کی فیسوں 10 سے 13 فیصد تک اضافہ کر دیا۔
زرعی یونیورسٹی میں داخل ہونے والے طلبہ سے بھی 10 فیصد اضافی فیس وصول کی جائے گی جبکہ خیبر میڈیکل یونیورسٹی نے امتحانی فیسوں میں اضافہ کر کے اعلامیہ جاری کردیا۔
پرووسٹ اسلامیہ کالج یونیورسٹی پشاور کے مطابق فیسوں میں اضافہ قانون کے مطابق کیا گیا ہے، یونیورسٹی کے اخراجات پورے کرنے کے لئے فیسوں میں اضافہ کردیا گیا ہے، ہاسٹل کی فیس بھی 33 ہزار سے بڑھا کر 36 ہزار کردی گئی۔
وائس چانسلر پشاور یونیورسٹی ڈاکٹر جہاں بخت کے مطابق فیسوں میں اضافہ کوئی نئی بات نہیں، یہ معمول کا کام ہے، ذرعی اور پشاور یونیورسٹیز کی فیسوں میں اضافہ کا فیصلہ سینڈیکیٹ کی منظوری کے بعد کیا جا رہا ہے۔

مزید پڑھیں:  بنگلادیش احتجاج ،سپریم کورٹ نے کوٹہ سسٹم پردرآمد روک دیا