ایمان مزاری گرفتار

ایمان مزاری کو کسی بھی مقدمے میں گرفتار نہ کیا جائے، اسلام آباد ہائیکورٹ

ویب ڈیسک: اسلام آباد ہائیکورٹ نے ایمان مزاری کو کسی بھی مقدمے میں گرفتار کرنے سے روک دیا، ذرائع کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ میں ایمان مزاری کے مقدمات کی تفصیلات فراہمی اور حفاظتی ضمانت کی درخواست پر جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے سماعت کی، جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے دو صفحات پر مشتمل تحریری حکم جاری کیا ہے۔ حکم نامے میں عدالت نے کہا کہ سیکرٹری، آئی جی، ڈی جی ایف آئی اے ایمان مزاری کو گرفتار نہیں کریں گے۔
عدالت نے ریمارکس میں کہا کہ سیکرٹری داخلہ، پولیس اور ایف آئی اے کسی صوبے کی گرفتاری میں معاونت نہیں کریں گے، ایمان مزاری کو اسلام آباد کی حدود سے باہر نہ لے جانے کو یقینی بنائیں۔ حکم نامے کے مطابق سیکرٹری داخلہ ایمان مزاری کیخلاف مقدمات سے متعلق آگاہ کریں، ذرائع کے مطابق ایس ایس پی آپریشنز کے مطابق اسلام آباد میں ایمان مزاری کیخلاف تین مقدمے درج ہیں۔ عدالت نے کہا کہ اسلام آباد پولیس کے مطابق ایمان مزاری اسلام آباد کے دو مقدمات میں ضمانت پر ہیں، پٹشنر کی والدہ نے کہا کہ تیسرے مقدمے میں ضمانت کی صورت میں پھر گرفتاری کا خدشہ ہے۔

مزید پڑھیں:  آئین ایڈہاک ججز کی تعیناتی کی اجازت دیتا ہے، اعظم نذیر تارڑ