افغان کرنسی مستحکم

ڈالر اور یورو کی اونچی اڑان کے باوجود افغان کرنسی مستحکم

ویب ڈیسک: عالمی سطح پر ڈالر کی اونچی اڑان کے باوجود افغان کرنسی مستحکم ہو رہی ہے، عالمی بینک کے مطابق رواں دنیا کی اہم کرنسیوں کے مقابلے میں افغانی کرنسی مستحکم اور بہتر ہوئی ہے۔ ایرانی کرنسی کے مقابلے میں 41 اعشاریہ 2 فیصد، پاکستانی روپے کے مقابلے میں 29 اعشاریہ 3 فیصد، امریکی ڈالر کے مقابلے 7 اعشاریہ 3 فیصد، یورو کے مقابلے 4 اعشاریہ 9 فیصد اور چینی یوآن کے مقابلے میں 6 فیصد کی بہتری آئی۔
ذرائع کے مطابق بھارتی روپے کے مقابلے میں بھی افغان کرنسی مستحکم ہے جبکہ 24 اگست 2023 تک ایک امریکی ڈالر 83 اعشاریہ 1 افغانی کرنسی کا تھا اور اس کا مطلب ہے کہ 15 اگست 2021 کے مقابلے میں افغان کرنسی کی قدر میں 3 اعشاریہ 7 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔
ڈالر کے مقابلے میں افغان کرنسی میں یہ بہتری مقامی سطح پر لین دین کے دوران غیر ملکی کرنسی کے استعمال پر پابندی، زیادہ ترسیلات زر اور اقوام متحدہ کی ڈالر کی شپمنٹ سے ممکن ہوئی، اقوام متحدہ نے 2022 میں 1 اعشاریہ 8 ارب ڈالر اور 2023 میں 1 اعشاریہ 2 ارب ڈالر دیے تھے۔
ورلڈ بینک نے بتایا کہ مارچ 2023 سے ہنرمند اور غیر ہنرمند افراد کے لیے نوکری کے مواقع میں اضافہ ہوا، موزوں موسم کی بدولت زراعت کے شعبے میں کاشتکاری، آمدن اور مزدوروں کی مانگ میں اضافہ ہوا جبکہ طلب میں اضافے کے سبب اجرت میں بھی اضافہ ہوا ہے۔

مزید پڑھیں:  بنکاک میں ہوٹل کے کمرے سے 6سیاحوں کی لاشیں برآمد