بجلی بلوں میں ریلیف

بجلی بلوں میں ریلیف پلان آئی ایم ایف نے مسترد کر دیا

ویب ڈیسک: آئی ایم ایف نے بجلی بلوں میں دی جانیوالی ریلیف کیلئے تیار کیا جانے والا مجوزہ پلان مسترد کر دیا۔ ذرائع وزارت خزانہ کے مطابق آئی ایم ایف سے بجلی بلوں میں ریلیف کے پلان پر اتفاق نہ ہو سکا، پلان میں بتایا گیا تھا کہ بلوں میں ریلیف سے ساڑھے 6 ارب سے کم کا امپیکٹ آئے گا۔
آئی ایم ایف نے پلان مسترد کرتے ہوئے 15 ارب سے زائد کا امپیکٹ بتایا جبکہ اس کے ساتھ ساتھ آئی ایم ایف نے 15 ارب کی مالیاتی گنجائش پوری کرنے کا پلان بھی پوچھ لیا۔ وزارت خزانہ کے مطابق آئی ایم ایف کے ساتھ دوبارہ پلان شیئر کیا جائے گا اور نئے پلان شیئر ہونے پر آئی ایم ایف حکام اور وزارت خزانہ کے مابین دوبارہ بات چیت کی جائے گی۔
ذرائع نے بتایا کہ بلوں میں ریلیف دینے کیلئے آئی ایم ایف کو بجٹ سے آؤٹ نہ ہونے کی یقین دہانی کرائی گئی ہے تاہم بلوں کو 4 ماہ میں وصول کرنے کیلئے آئی ایم ایف سے درخواست کی گئی۔ پلان مسترد ہونے پر دوبارہ آئی ایم ایف سے تبادلہ خیال کیا جائیگا کہ کسی طرح عوام کو ریلیف دیا جا سکے، بلوں کو اقساط میں وصول کرنے کا پلان بھی آئی ایم ایف کے ساتھ ڈسکس کیا جائے گا۔

مزید پڑھیں:  غزہ میں رہائشی علاقوں پر بمباری، مزید 40فلسطینی شہید ہوگئے