سرکاری تعلیمی اداروں کی حالت زار بہتر بنانا چیلنج ہے، حاجی غلام علی

ویب ڈیسک: گورنر خیبر پختونخوا حاجی غلام علی نے ہزارہ یونیورسٹی کے 13ویں کانووکیشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سختیاں، مشکلات برداشت کر کے اپنے بچوں کا تعلیمی سفر مکمل کرنیوالے والدین کو سلام پیش کرتا ہوں۔
ان کا کہنا تھا کہ تعلیم یافتہ نوجوانوں کو ملکی ترقی و خوشحالی کی سوچ اپنانی ہے، منفی رویوں سے باہر نکل کر مثبت انداز سے آگے بڑھنے سے مجموعی ترقی ممکن ہے۔ حاجی غلام علی نے کہا کہ زمین بوس ہوتی ہماری تہذیب و روایت کو آپ نوجوانوں نے زندہ کرنا ہے، یونیورسٹیوں کو جدید تحقیق اور انڈسٹریز کے ساتھ لنک کو فروغ دینے کی ضرورت ہے۔
حاجی غلام علی نے ہزارہ یونیورسٹی کے 13 ویں کانووکیشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بہترین ریسرچ اور انڈسٹریز کے ساتھ موثر لنک سے طالبعلموں کو بےروزگاری کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا جبکہ بے روزگاری ہی ہمارے ملک کیلئے اس وقت بہت بڑا مسئلہ ہے۔
انہوں نے کہا کہ سرکاری تعلیمی اداروں کی حالت زار بہتر بنانے اور معیاری تعلیم کی فراہمی ہم سب کیلئے ایک چیلنج ہے، طبقاتی نظام کو ختم کرنا ہو گا جس کیلئے سب نے ملکر کردار ادا کرنا ہو گا۔ گورنر حاجی غلام علی نے کہا کہ تعلیمی اداروں کو بھی معیاری تعلیمی نتائج یقینی بنانا ہونگے۔

مزید پڑھیں:  خیبر پختونخوا میں تیز بارشوں سے 4افراد جاں بحق،31زخمی