پشاور، غیر قانونی کرنسی ایکسچینج کیخلاف ایف آئی آے کا کریک ڈاون

ویب ڈیسک: حوالہ ہنڈی اور غیر قانونی کرنسی ایکسچینج کیخلاف وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف آئی اے کی جانب سے کریک ڈاون جاری ہے۔ اس کاروبار سے جڑے تمام عناصر کیساتھ زیرو ٹالرینس پالیسی کے تحت ان کے گرد گھیرا تنگ کیا جا رہا ہے۔
رواں سال کے ایف آئی آے پشاور زون نے حوالہ ہنڈی اور کرنسی کی غیر قانونی ایکسچینج میں ملوث عناصر کے خلاف 261 چھاپہ مار کاروائیاں کی گئیں. اس دوران 333 ملزمان دھر لئے گئے جبکہ ان کیخلاف 282 مقدمات کا اندراج کیا گیا۔
ایف آئی آے ترجمان کے مطابق حالیہ کارروائی میں گرفتار ہونے والے ملزمان بغیر لائسنس کرنسی ایکسچینج میں ملوث تھے۔ یاد رہے سال رواں وفاقی تحقیقاتی ادارے کی جانب سے مارے جانےوالے چھاپوں میں 86 کروڑ 29 لاکھ روپے سے زائد قیمت کی ملکی و غیر ملکی کرنسی برآمد کی گئی۔
ترجمان کا کہنا تھا کہ ملزمان کی گرفتاری کے لئے مارے جانے والے ان چھاپوں میں قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں کی جانب سے بھی معاونت شامل حال رہی۔
ایف آئی آے ترجمان کے مطابق ڈائریکٹر جنرل کی ہدایت کی روشنی میں ملزمان کی گرفتاری کے لئے تمام تر وسائل بروئے کار لا رہے ہیں اور اس کی روشنی میں ملوث ملزمان کو قرار واقعی سزائیں دلوائی جائیں گی۔

مزید پڑھیں:  صحت کارڈ پر مفت علاج کی بحالی کیلئے 5 ارب جاری کرنے کا فیصلہ