نان فائلر کے بجلی کنکشن بھی آئی ایم ایف کے نشانے پر آ گئے

ویب ڈیسک: ایف بی آر اور عالمی مالیاتی فنڈ کے مابین ورچوئل مذاکرات میں اہم پیش رفت، نان فائلرز کے بجلی کنکشنز بھی نشانے پر آ گئے۔
تفصیلات کے مطابق ایف بی آر اور آئی ایم ایف کی تکنیکی ٹیم کے مابین ہونے والے ورچوئل مذاکرات میں کمپلائنس رسک مینجمنٹ سمیت مختلف شعبوں سے ٹیکس کی وصولی اور منافع بخش کاروبار پر ٹیکسوں کے نفاذ کے حوالے سے تبادلہ خیال ہوا۔
اس دروان نان فائلرز کو بھی مدنظر رکھ کر بات چیت کی گئی، نا فائلر کو بھجوائے گئے نوٹسز پر آئی ایم ایف ٹیم کو بریفنگ دیتے ہوئے ایف بی آر کی جانب سے بتایا گیا کہ اب تک 7 لاکھ 46 ہزار نان فائلرز کو نوٹسز بھجوائَے گئے ہیں.
اس حوالے سے دوران مذاکرات یہ بھی کہا گیا کہ نان فائلرز کے بجلی کنکشن کاٹنے کا قدم بھی اٹھایا جاسکتا ہے۔
یاد رہے کہ یہ مذاکرات رواں ہفتے جاری رہیں گے اس بارے میں آئی ایم ایف تکنیکی ٹیم رپورٹ بھی جاری کرے گی۔
مذاکرات میں‌آئندہ مالی سال کے لیے ایف بی آر کا ٹیکس ہدف 11 ہزار ارب سے زائد رکھنے پربھی اتفاق کیا گیا۔

مزید پڑھیں:  پی سی بی کو براہِ راست وزیراعظم کے ماتحت کردیا گیا