گیس کنکشن پرپابندی کا خاتمہ

اوگرا نے نجی ہائوسنگ سوسائٹیوں کے لئے گیس کنکشن پر پابندی ختم کر دی۔ نوٹیفکیشن کے مطابق اوگرا کی جانب سے آر ایل این جی ٹیرف پر گیس کنکشن لگانے کی اجازت دی گئی ہے۔ نوٹیفکیشن کے مطابق جن ہائوسنگ سوسائٹیوں میں گیس پائپ لائن بچھائی جاچکی ہے وہاں کنکشن لگائے جاسکیں گے۔واضح رہے کہ سوئی نادرن گیس کمپنی نے نومبر 2021کو وفاقی حکومت کی ہدایت پر گیس کنکشن پر پابندی عائد کی تھی۔ ذرائع اوگرا کا کہنا ہے کہ ابھی پرانی آبادیوں کے گھروں کے لیے پالیسی وضع نہیں کی گئی، اس وقت نئے گیس کنکشن کی 42لاکھ درخواستیں زیر التوا ہیں۔گیس کنکشن پر پابندی اٹھانے اور مہنگے داموں گیس کنکشنز کی فراہمی کا صارفین کی جانب سے کیا ردعمل ملتا ہے وہ اپنی جگہ البتہ جاری صورتحال میں گیس کے بھاری بھرکم بلوں کے باعث لوگ گیس کنکشن کٹوا کر سلینڈر استعمال کرنے پر مجبور نظر آتے ہیں گیس کی قیمتوں میں اضافہ اور خرچ کئے بغیر چھ سات سو روپے گیس کے لازمی اور کم سے کم بل اب شاید عام آدمی کی استطاعت سے باہر ہو گئی ہے اور لوگ اس امر پر مجبور ہوں گے کہ وہ استعمال کئے بغیر بھی بل کی ادائیگی کی بجائے سلینڈر کے استعمال پر آجائیں گیس کی ناپیدی اور ضرورت کے وقت گیس نہ ملنا بھی معمول کا سنگین مسئلہ بن چکا ہے ایسے میں گیس کنکشن ہوتے ہوئے بھی لوگوں کو سلینڈربھروانے کی ضرورت پڑتی ہے اس ساری صورتحال سے حکومت اور کمپنیاں لاعلم نہیں ہوں گی اس مسئلے کا حل نکالے بغیر کنکشن پر کنکشن دیتے جانا کوئی دانشمندانہ عمل نہیں توقع کی جانی چاہئے کہ اس پر غور کرکے اس کاحل نکالنے میں مزید تاخیرنہیں ہوگی۔