شیخ رشید

شیخ رشید کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کے مقدمے کی سماعت ملتوی

ویب ڈیسک:سابق وزیرداخلہ شیخ رشید کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں ڈالنے کے مقدمے کی سماعت 5مارچ تک ملتوی کردی گئی ۔
ہائی کورٹ راولپنڈی بنچ کے جسٹس صداقت علی خان نے سربراہ عوامی مسلم لیگ شیخ رشید کا ای سی ایل میں نام ڈالنے سے متعلق درخواست پر سماعت کی ، شیخ رشید احمد کی جانب سے سردار عبدالرزاق ایڈوکیٹ عدالت پیش ہوئے، ایف آئی اے کی جانب سے جواب ہائی کورٹ راولپنڈی بنچ میں جمع کروا دیا گیا۔
ایف آئی اے نے عدالت میں کہا کہ ای سی ایل میں نام نیب نے ڈالا ہے، شیخ رشید کا نام نیب نے 190 ملین پاو¿نڈ سکینڈل کیس میں ای سی ایل میں شامل کیا، عدالت نے نام ای سی ایل میں ڈالنے سے متعلق چیئرمین نیب سے جواب طلب کر لیا۔
جسٹس صداقت علی خان نے ریمارکس دیے کہ جب شیخ رشید ملزم نہیں تو نام کیوں شامل کیا گیا، کیا آپ 190 ملین پاؤنڈ سکینڈل میں ملزم بھی ہیں، شیخ رشید سے عدالت کا سوال ، جس پر شیخ رشید نے جواب دیا کہ نہیں میں اس کیس میں ملزم نہیں ہوں۔
شیخ رشید کے وکیل نے کیس کی سماعت کل تک ملتوی کرنے کی استدعا کر دی، تاہم عدالت نے شیخ رشید کے وکیل کی استدعا کو مسترد کر دیا۔ عدالت میں سابق وزیرداخلہ نے استدعا کی کہ میرا کیس رمضان سے پہلے رکھ لیں ، میں عمرے کے لیے جانا چاہتا ہوں۔
جسٹس صداقت علی خان نے ریمارکس دیے کہ اس کے لیے اجازت ملے گی یا نہیں کچھ نہیں کہہ سکتے، وکیل شیخ رشید نے کہا کہ 190 ملین پاو¿نڈ کیس کا چالان پیش ہو چکا ہے اور فرد جرم بھی عائد ہو چکی ہے، عدالت نے کیس کی آئندہ سماعت 5 مارچ تک ملتوی کر دی۔

مزید پڑھیں:  عدالتی فیصلے کے بعد پی ٹی آئی کو 65 نشستیں ملنے کا امکان