ثوبیہ شاہد

ثوبیہ شاہد ایوان میں مسلسل پی ٹی آئی ورکرز کے نشانے پر

ویب ڈیسک: خیبرپختونخوا اسمبلی میں مسلم لیگ ن کی خاتون رکن اسمبلی ثوبیہ شاہد مسلسل تیسرے روز پی ٹی آئی کے ورکرز اور کارکنوں کے نشانے پر رہیں۔
ہلڑ بازی اور نعرے بازی پر سپیکر صوبائی اسمبلی بابر سلیم سواتی نے گیلری میں بیٹھے پی ٹی آئی ورکر ز کو خاموش رہنے کی تلقین کرتے ہوئے انہیں ایوان سے باہر نکالنے کی دھمکی بھی دیدی۔
ڈاکٹر عباد اللہ نے جب تقریر کے دوران دو روز ثوبیہ شاہد کیساتھ ہونے والے رویے کی مذمت کی تو گیلری میں موجود پی ٹی آئی ورکرز نے شور شرابا شروع کر دیا اور ہلڑ بازی کی۔
ورکرز کی جانب سے ثوبیہ شاہد کو ایک بار پھر غلط القابات سے پکارا گیا اور نعرے بازی کی گئی۔ مریم نواز اور نواز شریف کیخلاف بھی نعرے بازی شروع کر دی گئی جس پر ڈاکٹر عباد اللہ نے سپیکر کو ہاﺅس ان آرڈر کرنے کی درخواست کی۔
سپیکر صوبائی اسمبلی بابر سلیم سواتی نے اس موقع پر ورکرز کو مخاطب کیا اور کہا کہ وہ خاموش ہوجائیں اگر خاموشی اختیار نہیں کی جائیگی تو تمام ورکرز کو گیلری سے باہر نکال دیا جائیگا جس کے بعد ورکرز خاموش ہوگئے۔
دو روز تک پی ٹی آئی ورکرز کو جواب دینے والی ثوبیہ شاہد بھی گزشتہ روز خاموش رہیں اور اپنی نشست پر براجمان رہیں۔

مزید پڑھیں:  خیبر پختونخوا: چینی باشندوں کو نشانہ بنانے اور اغوا کرنے کا خدشہ