مولانا فضل الرحمان

مولانا فضل الرحمان نے عوامی ملین مارچ کا اعلان کردیا

ویب ڈیسک: جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے یکم جون کو عوامی ملین مارچ کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم نے تحریک کا آغاز کردیا ہے اب یہ رکے گی نہیں ۔
فیصل آباد میں جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ انتخابات کے حوالے سے سارا الزام الیکشن کمیشن پر نہیں ڈالنا چاہیے، اگر الزام الیکشن کمیشن پر ڈالناہے تو اس کا مطلب ملک میں آئین اور قانون نہیں ہے۔
انہوں نے کہا کہ تمام سیاست دانوں کو فکر کرنی ہوگی کہ ہمارے الیکشن متنازعہ ہوتے ہیں، ملک کا نظام اس وقت خراب ہے، آئین موجود ہے عملدرآمد نہیں ہے، الیکشن کمیشن تو ہاتھ پر ہاتھ رکھ کر بیٹھا دیکھتا رہتا ہے ، جب آئین پر عمل ہی نہیں ہوگا تو پھر آئین بنایا کیوں ہے۔
مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ 9مئی پر ہمارے بھی تحفظات ہیں سرکاری اداروں پر حملے کرنااور ان کو جلانا قابل مذمت ہے، اگر یہ دھاندلی کو نہیں مانتے تو پھر عوام نے بالکل 9 مئی کے بیانیے کو دفن کردیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ ملکی ترقی کیلئے ہمیں سیاسی جماعتوں کو مل بیٹھنا ہوگا ان کا راستہ روکنا ہوگا، اس وقت اقلیت حکومت چل رہی ہے، پیپلز پارٹی تو آئینی عہدے بھی لے رہی ہے اور کہتی ہے ہم حکومت میں نہیں ہیں۔

مزید پڑھیں:  نیتن یاہو کے گرد گھیرا تنگ، فرانس نے گرفتاری کی حمایت کر دی