سپاہی راشد محمود

لکی میں شہید ہونیوالے سپاہی راشد محمود کے والدین کے حوصلے بلند

ویب ڈیسک: لکی مروت میں دہشتگرد حملے کے دوران شہید ہونے والے سپاہی راشد محمود کے والدین نے اپنے بیٹے کی قربانی پر فخر کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ،ہم دہشت گردوں سے گھبرائے نہیں ہیں ۔
شہید کی والدہ کے مطابق میرے دو اور بیٹے ہیں اور اس وطن کی مٹی پر میں ان کو بھی قربان کر سکتی ہوںمیرا بیٹا شہید ہوا ہے اور مجھے اس پر بہت فخر ہے۔
شہید کے والد نے بتایا کہ عید سے پہلے جب راشد محمود نے مجھے فون کیا تو کہا کہ ابو قربانی میں خود آ کر کروں گا،یہ قربانی اس کی اپنی تھی وہ اور وہ اللہ کو پیارا ہو گیا۔
والدہ نے مزید بتایا کہ میرے تین بیٹے تھے لیکن راشد میرا سب سے زیادہ تابعدار اور خدمت گزار بیٹا تھا، بیٹا جب بھی عید پر گھر آتا تھا تو سب لوگوں کے لیے تحفے لے کر آتا تھا۔

مزید پڑھیں:  مخصوص نشستوں کا کیس، محفوظ فیصلہ آج سنائے جانے کا امکان

انہوں نے کہا کہ میرے بیٹے نے بچپن میں میرے بیٹے نے میلے سے ایک کھلونا لیا اور مجھے کہا کہ امی میں جنگ لڑنے جا رہا ہوں،میں نے پوچھا کہ کس سے جنگ لڑنے جا رہے ہو تو میرے بیٹے نے کہا کہ میں انڈیا سے جنگ لڑنے جا رہاہوں۔
شہید راشد محمود کے والدین نے بتایا کہ مجھے بہت فخر ہے کہ میں ایک شہید کا والد ہوں اور میرے بیٹے نے اپنی جان اس ملک کے لیے قربان کی،شہیدیہ ملک ہیں تو ہم ہیں اگر یہ ملک نہیں ہے تو ہمارا بھی کوئی نام و نشان نہیں۔
شہید راشد محمود کے دوست نے بتایا کہ راشد محمود جب بھی گھر آتا ہم سے خصوصی طورپر ملتے آتا تھا بچوں سے محبت اور شفقت سے پیش آتا تھا ۔

مزید پڑھیں:  مہنگائی میں مزید اضافہ، 23اشیا کی قیمتیں بڑھ گئیں