ٹیکس ایڈجسٹمنٹ

اشتہارات کی مد میں کمپنیز کی ٹیکس ایڈجسٹمنٹ پر پابندی کی تجویز واپس لینے کا مطالبہ

ویب ڈیسک: آل پاکستان نیوز پیپرز سوسائٹی اور پاکستان براڈ کاسٹرز ایسوسی ایشن نے اشتہارات کی مد میں کمپنیز کے 25فیصد تک اخراجات کی ٹیکس ایڈجسٹمنٹ پر پابندی کی تجویز واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔
اس حوالے سے وزیر اعظم اور وزیر خزانہ کو خط لکھے گئے خط میں سیکرٹری جنرل اے پی این ایس سرمد علی نے کہا ہے کہ آل پاکستان نیوز پیپرز سوسائٹی ریاست اور حکومت کے ساتھ پہلی صف میں کھڑی ہے لیکن فنانس بل میں مجوزہ ترمیم کی منظوری سے اشتہارات دینے والی کمپنیوں کے ٹیکس واجبات میں اضافہ اور اشتہارات کی مد میں ہونے والے اخراجات میں کمی آئے گی۔
چیئر مین پی بی اے شکیل مسعود نے کہا کہ پی بی اے اور اے پی این ایس کے ارکان پہلے ہی مشکلات کا شکار ہیں، وہ معیشت کو ڈاکیومنٹ کرنے کی حمایت کرتے ہیں لیکن مجوزہ ترمیم سے میڈیا انڈسٹری کا بزنس مزید متاثر ہوگا۔
شکیل مسعود کا مزید کہنا تھا چھوٹے اخبارات اور میڈیا چینلز کی بندش سے مزید صحافی بے روزگار ہوں گے، ایسی ترمیم سے ملک میں براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری کی حوصلہ شکنی بھی ہوگی۔

مزید پڑھیں:  پی ٹی آئی مقبولیت سے خوفزدہ مینڈیٹ چور سرکار پابندی کا ڈرامہ رچا رہی ہے