وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا کارورل اکنامک ٹرانسفارمیشن منصوبے میں تاخیر کا نوٹس

ویب ڈیسک: وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا علی امین گنڈا پور نے رورل اکنامک ٹرانسفارمیشن منصوبے میں تاخیر کا نوٹس لے لیا، متعلقہ حکام کو بروقت عملی کام شروع کرنے کیلئے تمام پیشگی ضروریات جلد مکمل کرنے کی ہدایت کردی۔
وزیراعلیٰ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا سردار علی امین خان گنڈاپور کی زیر صدارت رورل اکنامک ٹرانسفارمیشن منصوبے سے متعلق اجلاس ہوا جس میں چیف سیکرٹری ندیم اسلم چوہدری، سیکرٹری زراعت جاوید مروت کے علاوہ دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی ۔
اجلاس کے دوران وزیر اعلیٰ کو پراجیکٹ کے خد و خال ، اب تک کی پیشرفت، درپیش مسائل اور دیگر امور پر تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ خیبرپختونخوا رورل اکنامک ٹرانسفارمیشن پراجیکٹ بین الاقوامی شراکت دار اداروں کے تعاون سے 30 ارب روپے کی لاگت سے مکمل کیا جائے گا۔
منصوبے کے تین حصے ہونگے جن میں ایگری بزنس ڈویلپمنٹ ، اسکلز ڈویلپمنٹ اینڈ ایمپلائمنٹ پروموشن اور پروگرام منیجمنٹ اینڈ پالیسی سپورٹ شامل ہیں
ایگری بزنس ڈویلپمنٹ کے تحت دیگر اقدامات کے علاہ 550 پروفیشنل فارمرز آرگنائزیشنز قائم کی جائیں گی ،اسکلز ڈویلپمنٹ اینڈ ایمپلائمنٹ پروموشن کے تحت ایک لاکھ 10 ہزار سے زائد لوگوں کو روزگار کے مواقع فراہم کیے جائیں گے ۔
بریفنگ میں بتایاگیا کہ ایگری بزنس کے لیے 25000لوگوں کو ٹریننگ دی جائیگی ، 60 ہزار نوجوانوں کو ٹیکنیکل اینڈ ووکیشنل تربیت دی جائیگی ۔
اس موقع پر وزیراعلیٰ علی امین گنڈ پور نے منصوبے پر عملدرآمد میں تاخیر کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام کو منصوبے پر بروقت عملی کام شروع کرنے کے لئے تمام پیشگی ضروریات جلد سے جلد مکمل کرنے کی ہدایت کردی ۔
وزیراعلیٰ نے کہا کہ منصوبے پر بروقت کام شروع کرنے اور اس پر پیشرفت یقینی بنانے کے لئے ٹائم لائنز مقرر کرکے ان پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے۔
وزیر اعلی خیبر پختونخوا نے ہدایت کی کہ منصوبے پر عملدرآمد کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کے لئے ٹھوس اقدامات اٹھائے جائیں،منصوبے کو ایک کامیاب اور مثالی منصوبہ بنانے کے لئے متعلقہ محکموں اور شراکت دار اداروں کے درمیاں قریبی روابط کا موثر میکنزم تیار کیا جائے۔
انہوں نے کہا کہ متعلقہ محکمے منصوبے پر پیشرفت کا جائزہ لینے کے لیے باقاعدگی سے اجلاس منعقد کریں کیونکہ زراعت کے شعبے کی جدید طرز پر ترقی صوبائی حکومت کی اہم ترجیحات میں شامل ہے اس مقصد کے لئے صوبائی حکومت خاطر خواہ سرمایہ کاری کر رہی ہے۔
وزیر اعلی نے کہا کہ لوگوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرنے اور ذریعہ معاش فراہم کرنے کے لئے زراعت کے شعبے میں بہت ذیادہ استعداد موجود ہے۔
موجودہ صوبائی حکومت اس استعداد کا موثر استعمال یقینی بنانے کے لئے ایک جامع حکمت عملی کے تحت اقدامات کررہی ہے۔

مزید پڑھیں:  چارسدہ میں فائرنگ کرکے دو افراد کو قتل کردیا گیا