وزیراعظم

آئی ایم ایف کیساتھ مل کر بجٹ بنانا مجبوری تھی ،وزیراعظم

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف ) کے ساتھ مل کر بجٹ بنانا ہماری مجبوری تھی ۔
قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھاکہ پاکستان ورکس ڈیپارٹمنٹ کے خاتمے کا اعلان ہو چکا ہے،پی ڈبلیو ڈی میں بندر بانٹ ہوتی ہے اسکے خاتمے کا اعلان کیا گیا، وہاں اتنی کرپشن ہوتی ہے، سب ممبرز کو پتہ ہے۔
انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت کے دور میں جنوبی پنجاب کا بجٹ زیادہ اور ملازمتوں کا شیئر زیادہ تھا، جنوبی پنجاب میں لیپ ٹاپ اسکیم میں کوٹہ زیادہ تھا ، جنوبی پنجاب میں وزیراعلی روزگار اسکیم کا کوٹا 10فیصد زیادہ رکھاگیا، پنجاب نے اپنے وسائل سے وہ منصوبے بھی بنائے جو وفاق کے منصوبے تھے۔
انہوں نے کہا کہ اخراجات میں کمی سے متعلق معلومات ایک ڈیڑھ ماہ میں سامنے لائیں گے۔
وزیراعظم کا کہناتھاکہ یہ حقیقت ہے ہمیں آئی ایم ایف کیساتھ مل کر بجٹ بنانا پڑا یہ معروضی حالات ہیں۔
ہمیں آئی ایم ایف کا جواب آگیا توپیسٹی سائیڈ سے متعلق جواب دیں گے اور امید ہے خوشخبری دیں گے۔

مزید پڑھیں:  ہنگو میں اٹھویں محرم الحرام کا جلوس اختتام پذیر