رورل اکنامک ٹرانسفارمیشن پراجیکٹ

پشاور، رورل اکنامک ٹرانسفارمیشن پراجیکٹ پر عملی کام شروع کرنے کا گرین سگنل

ویب ڈیسک: صوبائی حکومت نے آئی ایف اے ڈی کے اشتراک سے رورل اکنامک ٹرانسفارمیشن پراجیکٹ پر عملی کام شروع کرنے کا گرین سگنل دیدیا۔
وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا سردار علی امین گنڈاپور سے انٹرنیشنل فنڈ فار ایگریکلچرل ڈیویلپمنٹ کی ریجنل ڈائریکٹر ریحانہ رضا نے ملاقات کی جس میں خیبر پختونخوا میں رورل اکنامک ٹرانسفارمیشن پراجیکٹ سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔
اس موقع پر چیف سیکرٹری کے علاوہ محکمہ زراعت اور منصوبہ بندی کے اعلی حکام بھی موجود تھے۔
ملاقات میں آئی ایف اے ڈی کے اشتراک سے رورل اکنامک ٹرانسفارمیشن پراجیکٹ سے متعلق معاملات پر تبادلہ خیال سمیت پراجیکٹ پر عملی کام شروع کرنے کا گرین سگنل دیدیاگیا۔
ملاقات میں اس حوالے سے پیشگی انتظامات کو بھی جلد حتمی شکل دینے اور متعلقہ محکموں اور ڈونر ادارے کے درمیان کوآرڈینیشن کا موثر میکنزم تیار کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔
وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا نے کہا کہ تمام متعلقہ محکموں کو پراجیکٹ پر پیشرفت کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کے لئے ضروری ہدایات جاری کردیں ۔
منصوبے پر پیشرفت کا جائزہ لینے کے لئے متعلقہ انتظامی سیکرٹریز کو ہر 15 دنوں میں باقاعدگی سے اجلاس منعقد کرنے کا ٹاسک دیا گیا ہے۔
سردار علی امین گنڈاپور کا ملاقات میں کہنا تھا کہ لوگوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرنے کے لئے رورل اکنامک ٹرانسفارمیشن پراجیکٹ ایک اہم منصوبہ ہے۔
انہوں نے کہا کہ زراعت کے شعبے کی جدید طرز پر ترقی صوبائی حکومت کی اہم ترجیحات میں شامل ہے۔ اس مقصد کے لئے صوبائی حکومت خاطر خواہ سرمایہ کاری کر رہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ زراعت کے شعبے کی ترقی کے لئے موجودہ صوبائی حکومت 49 مختلف منصوبوں پر کام کر رہی ہے۔
اس حوالے سے لوگوں کو آسان قرضوں کی فراہمی کے لئے نئے بجٹ میں خطیر رقم مختص کی گئی ہے۔
سردار علی امین گنڈاپور نے کہا کہ چیک ڈیمز کی تعمیر کے لئے متعدد موزوں مقامات کی نشاندہی کی گئی ہے۔

مزید پڑھیں:  طوفانی بارشوں کے باعث کراچی میں فلائیٹ آپریشن متاثر