34 چینلز کو شوکاز نوٹس

توہین عدالت کیس میں 34 چینلز کو شوکاز نوٹس جاری

توہین عدالت کیس میں 34 چینلز کو شوکاز نوٹس سپریم کورٹ کی جانب سے جاری کر دیا گیا۔ عدالت نے جواب طلب کر لیا۔
ویب ڈیسک: توہین عدالت کیس میں شوکاز نوٹس سپریم کورٹ کی جانب سے جاری کر کے 2 ہفتوں میں چینل مالکان کے دستخط کے ساتھ جواب طلب کر لیا۔
فیصل واوڈا اور مصطفیٰ کمال توہین عدالت کیس میں سپریم کورٹ کے چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ، جسٹس عقیل عباسی اور جسٹس نعیم افغان نے 34 چینلز کو شوکاز نوٹس جاری ہونے کا حکم نامہ جاری کر دیا۔
عدالتی حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ شوکاز نوٹس کا جواب آپریشنل ہیڈ اور چینل مالکان یا شیئر ہولڈر کے دستخط کے ساتھ ہوں۔ وکیل صفائی فیصل صدیقی کے مطابق ابتدائی جواب جمع کروا دیا گیا۔
چینلز کے جواب پر دستخط کسی چینل مالک کے نہیں بلکہ وکیل فیصل صدیقی کے ہیں، تمام چینلز کی جانب سے دلائل کم و بیش ایک ہی طرح کے ہیں، بادی النظر میں چینلز کا جواب اطمینان بخش نہیں۔
یاد رہے کہ فیصل واوڈا اور مصطفی کمال کے توہین عدالت کیس کے بعد سپریم کورٹ کی جانب سے چینلز کو نوٹس جاری کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

مزید پڑھیں:  پشاور: گلبہار بی آر ٹی سٹاپ کے قریب مسلح ملزمان کی ہیئر ڈریسر کی دکان میں دن دیہاڑے ڈکیتی