کم عمر لڑکی سے شادی

18سال سے کم عمر لڑکی سے شادی پر 15قید کی سزا

ویب ڈیسک: افریقی ملک سیرا لیون میں 18سال سے کم عمر لڑکی سے شادی پر 15سال قیداور 4ہزار ڈالر جرمانے کا سامنا کرنا پڑے گا ۔
غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ملک کے صدر جیولس مادا بائیو نے دارالحکومت فری ٹائون میں منعقدہ تقریب کے دوران کم عمر بچیوں سے شادی کی ممانعت کے قانون پر دستخط کیے گئے۔
نئے قانون کے تحت کم عمر لڑکیوں سے شادی کی تقریب میں شرکت کرنے والے دلہا یا دلہن کے والدین حتیٰ کہ شادی میں شریک مہمانوں کو بھی اس سزا اور جرمانے کا سامنا کرنا ہوگا۔
قانون کے تحت سیرا لیون میں 18سال سے کم عمر لڑکی سے شادی کرنے والے افراد پر 15سال قید اور 4ہزار ڈالر کا جرمانہ عائد کیا جائے گا ۔
سیرالیون کی وزارت صحت کے مطابق کم عمری میں شادی ملک میں دوران زچگی اموات کی تعداد میں اضافے کا سبب بنتی ہے ۔
واضح رہے کہ سیرا لیون میں زچگی اموات کی شرح دنیا بھر کے ممالک سے زیادہ ہے۔

مزید پڑھیں:  بنوں امن مارچ میں فائرنگ،بھگدڑ سے 4 افراد جاں بحق