مرے کو مارے شامدار

وزیراعظم شہباز شریف نے بجلی بلوں میں اضافی یونٹ ڈالنے والے افسران اور اہلکاروں کے خلاف سخت ایکشن لینے کی تاکید کرتے ہوئے ایسے لوگوں کو فوری طور پر معطل کرنے اور ان کے خلاف انکوائری کر کے انہیں کیفر کردار تک پہنچانے کا حکم دیا ہے، جسے موجودہ صورتحال میں ایک اہم اور جائز اقدام قراردیاجاسکتاہے،بدقسمتی سے ایک طرف بجلی کے نرخوں میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے جس سے متاثر ہونے والوں کی تعداد روز بروز بڑھ رہی ہے اور دوسری جانب بجلی چوری کی وارداتوں میں اضافہ ہو رہا ہے، جبکہ متعلقہ علاقوں میں اس قسم کی لائن لاسز پر اٹھتے سوالوں کی وجہ سے بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کے افسران اور نچلا عملہ بشمول میٹر ریڈرز جان چھڑانے کیلئے اپنے اپنے سب ڈویژنز کی آمدن بڑھانے کیلئے شریف ،بے بس اور غریب صارفین کے بلوں میں اضافی یونٹ ڈال کر ان کیلئے مشکلات کا باعث بن رہے ہیں اور بجلی چوروں کی ناکردنیوں کی سزا کم سے کم بجلی خرچ کرنے والوں کو دے رہے ہیں، جو ظلم سے بھی کہیں بالا ستم ہے، ایسے سنگدل اور عوام دشمن افراد کو کیفر کردار تک پہنچانا لازم ہے، جبکہ سلاٹ سسٹم کو ختم کر کے میٹر پر اصل ریڈنگ کے حوالے سے ہی بل ارسال کرنے کی ضرورت ہے جس میں اس قسم کی زیادتی کے امکانات ختم ہو جاتے ہیں۔

مزید پڑھیں:  سرتسلیم خم