سیاست کوداؤپر لگایا

ہم نے ریاست کو بچاکرسیاست کوداؤپر لگایا: وزیراعظم

ویب ڈیسک: وزیراعظم میاں شہباز شریف نے کہا ہے کہ ہم نے ریاست کو بچاکرسیاست کوداؤپر لگایا، گھریلو صارفین کو 200یونٹ تک 3ماہ کیلئے رعایت دے رہے ہیں۔
اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ2021-22میں سیاست چمکانے کیلئے ریاست کو نقصان پہنچایا گیا،اگر ریاست کو نہ بچایا ہوتا تو کہاں کی سیاست اور کہاں کا بجٹ ہوگا۔
وزیراعظم نے کہا کہ اس سے پہلے سیاست کو چمکانے کیلئے بڑے بول بولے گئے، کہا گیا 90دن میں کرپشن کا خاتمہ کریں گے مگر کرپشن کے بڑے اسکینڈل آئے۔
گندم اور چینی کی درآمد اور برآمد میں جیبیں بھری گئیں، کہا گیا لوٹی ہوئی دولت واپس لائیں گے مگر 190 ملین پاؤنڈ پر ہاتھ پھیرے گئے۔
وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ کہ دنیا میں تیل کی قیمت اوپر جارہی تھی مگر عدم اعتماد سے بچنے کیلئے تیل کی قیمت کم کرکے معیشت کو نقصان پہنچایا گیا۔
انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں 28 ہزار ٹیوب ویل کنکشنز پر بجلی استعمال ہوتی تھی مگر بل نہیں دیتے تھے جس سے ہمیں 10 سال میں 500 ارب کا نقصان ہوا، ان 28 ہزار ٹیوب ویل کنکشن کو کاٹ کر انہیں سولر پر منتقل کریں گے جس پر 55 ارب کی لاگت آئے گی اور اس سے سالانہ 70سے 80ارب کی بچت ہوگی ۔
وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ بجٹ پرتنقید کی گئی کہ آئی ایم ایف کے کہنے پربجٹ بنایاگیا، آئی ایم ایف کے ساتھ 3 سالہ پروگرام کررہے اس میں کوئی راز نہیں ہے، بجٹ پر ہم نے عوام سے غلط بیانی سے کام نہیں لیا۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ بجٹ میں یقینا ٹیکس لگے لیکن اشرافیہ پرٹیکس پہلی بارلگا، پہلی بار رئیل اسٹیٹ پر ٹیکس لگا جس سے 100 ارب ملنے کا امکان ہے، مزید لگنا چاہیے اور اگلے سال ریئل اسٹیٹ پر ٹیکس کے لیے مزید تیاری کے ساتھ آئیں گے۔
وزیر اعظم نے کہا کہ تنخواہ دار طبقے پر ٹیکس لگا جس پر انہوں نے جائز احتجاج کیا، 200یونٹ والے صارفین کوبجلی کے نرخ میں تین ماہ کے لئے رعایت دے رہے ہیں، 200یونٹ تک صارفین کو 4روپے سے 7روپے تک فی یونٹ فائدہ ہوگا، کراچی کے پروٹیکٹڈ صارفین کوبھی اس سے فائدہ پہنچے گا۔
وزیر اعظم شریف کا کہنا تھا کہ کراچی کی بندرگاہ پر سالانہ 1200 ارب روپے امپورٹ ٹیکس کی چوری ہوتی ہے، ملک میں اربوں روپے کی کرپشن کو بند کرنا ہوگا۔

مزید پڑھیں:  کاٹلنگ :نجی میڈیکل سنٹر کے ڈاکٹروں کی مبینہ غفلت سے بچہ جاں بحق