مائیکروویو ٹیکنالوجی کی مدد سے ذیابیطس کا مریض صحتیاب

سکاٹ لینڈ میں نئی حیرت انگیز مائیکروویو ٹیکنالوجی کی مدد سے ذیابیطس کے ایک مریض کی دونوں ٹانگیں کٹنے سے بچ گئیں۔
74 سالہ بیری میلڈ کو ٹائپ ٹو ذیابیطس ہے اور انہوں نے دیکھا کہ پیروں کے السر کووڈ وبائی مرض کے دوران مسلسل خراب ہوتے گئے جب تک کہ سرجنوں نے کہا کہ ان کے پاس کٹوتی کے سوا کوئی چارہ نہیں ہے۔
مریض جن کا نام مسٹر میلڈ ہے، کا کہنا تھا کہ اسپتال میں ایک میڈیکل طالب علم تھا جس نے ان کی حالت کا مشاہدہ کرتے ہوئے مائکروویو علاج کو ایک اختیار کے طور پر پیش کیا اور نو ماہ کے علاج کے بعد وہ اب مکمل طور پر صحت یاب ہیں۔
کورونا وبا کے دوران مسٹر میلڈ کے پاؤں پر ذیابیطس کی وجہ سے زخم نمودار ہوگئے تھے جس کے بعد سے ان کی حالت تشویش ناک حد تک بڑھ گئی تھی اور نوبت پیروں کو کاٹنے تک آگئی تھی تاہم اسٹرلنگ میں ’ایمبلیشن‘ نامی ادارے کی تیار کردہ مائیکرو ویو ٹیکنالوجی Swift کے ذریعے زخموں کا کامیاب علاج کیا گیا۔
اس ٹیکنالوجی میں مدافعتی نظام کو متحرک کرنے کے لیے مائیکرو ویوز کی کم توانائی کی خوراک استعمال کی جاتی ہے۔

مزید پڑھیں:  بغیر وجہ وزن میں کمی سنگین بیماریوں کا اشارہ ہوسکتی ہے
کیٹاگری میں : صحت