دی لیجنڈ آف مولاجٹ عید الاضحی کو بھی ریلیز نہ ہوسکی

اسلام آباد: تنازعات کا شکار فواد خان کی فلم دی لیجنڈ آف مولاجٹ  کی عید ٹرین پھر چھوٹ گئی ہے، فلم کو گزشتہ سال عید پر ریلیز کیا جانا تھا جو نامعلوم وجوہات کی بنا پر نہیں ہوسکی۔ اس سال عیدالفطر پر بھی فلم ریلیز نہ کی جا سکی، اب فلم کا بڑی عید پر بھی ریلیز کا امکان نہیں ہے، پاکستانی فلمی شائقین عرصے سے اس مہنگی فلم کی نمائش کے منتظر ہیں لیکن مختلف وجوہات کے سبب فلم کی ریلیز التوا کا شکار ہے،

شہرہ آفاق فلم مولا جٹ کے پروڈیوسر سرور بھٹی نے 2017 میں کاپی رائٹ کا مقدمہ نئی فلم کے پروڈیوسر بلال لاشاری اور عمارہ حکمت کے خلاف درج کرایا تھا، فلم دی لیجنڈ آف مولا جٹ میں فواد خان نے مولا جٹ کا کردار ادا کیا ہے جب کہ اداکار حمزہ علی عباسی نے نوری نتھ کا کردار نبھایا ہے۔ دیگر ستاروں میں ماہرہ خان، عمائمہ ملک اور شفقت چیمہ سمیت دیگر شامل ہیں،

پاکستان کی تیار کردہ شاہکار پنجابی فلم مولا جٹ 1979 میں ریلیز ہوئی تھی اور مقبولیت کے نئے ریکارڈ قائم کر گئی تھی۔ اس کے بعد سلطان راہی اور مصطفیٰ قریشی کی جوڑی فلموں کی کامیابی کی ضمانت سمجھی جانے لگی تھی۔ یہ جوڑی سلطان راہی کی موت تک برقرار رہی تھی،

دسمبر 2018 میں جب نوجوان ہدایتکار بلال لاشاری کی زیر ہدایت پایہ تکمیل کو پہنچنے والی فلم دی لیجنڈ آف مولا جٹ کا پہلا ٹریلر جاری کیا گیا تو اسے چند ہی گھنٹوں میں بے پناہ مقبولیت مل گئی تھی۔ مختصر سے ٹریلر میں نظر آرہا تھا کہ ایکشن اور رومانس دونوں ہی فلم بینوں کو دیکھنے کے لیے ملے گا۔