پاکستان نے پلوامہ حملے سے متعلق مودی کا بیان مسترد کردیا

ویب ڈیسک (اسلام آباد): پاکستان نے بھارتی وزیراعظم کی جانب سے پلوامہ حملے میں پاکستان کے ملوث ہونے کے اشارے کو قطعی طور پر مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ فروری 2019 میں پلوامہ حملے کا براہ راست فائدہ بی جے پی حکومت نے اٹھایا، ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے ایک بیان میں کہا کہ بھارتی وزیراعظم نے پاکستان کی قومی اسمبلی میں وفاقی وزیر کے بیان کو توڑ مروڑ کر پیش کیا، وفاقی وزیر نے پاکستان کی مسلح افواج کی طرف سے بھارت کو منہ توڑ جواب کا حوالہ دیا تھا، ان کا کہنا تھا کہ وفاقی وزیر نے 26 فروری کو ناکام بھارتی مہم جوئی کے منہ توڑ جواب کا ذکر کیا تھا، اپنی کمزوریوں اور ناکامیوں کا الزام پاکستان پر لگانا بی جے پی قیادت کی خصلت ہے، پاکستان مخالف پروپیگنڈا بی جے پی کی انتخابی مہم کا حصہ رہا ہے، ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ پلوامہ حملے اور پاکستان مخالف انتخابی مہم کے بعد بی جے پی کو لوک سبھا میں بڑی کامیابی ملی، زاہد حفیظ چوہدری کا کہنا تھا کہ بھارت پلوامہ حملے میں پاکستان کے ملوث ہونے کا کوئی بھی ثبوت پیش نہیں کر سکا، بی جے پی اپنی ملکی سیاست خصوصاً الیکشن میں پاکستان کو گھسیٹنا بند کرے۔