ایل این جی ریفرنس۔ سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی پر فرد جرم عائد

ویب ڈیسک (اسلام آباد):ایل این جی ریفرنس کیس میں سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی پر فرد جرم عائد، سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا صحت جرم سے انکار،شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ میں تمام تر لگائے گئے الزامات کو مسترد کرتا ہوں، اسلام آباد نیب کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو، ایل۔این جی ایل این جی کا نام آتا ہے اس کیس کا ایل این جی کا کوئی تعلق نہیں،میں نے چار سال منسٹری میں جو کام کیا اس کی چارج شیٹ بنا کر پیش کر دیا گیا،عدالت کی تو ہیں ہو جائے گی یہ تماشے ختم ہونگے تو ملک چلے گا،12 افراد کے نام ریفرنس میں نامزد کیے گئے ہیں، بدنصیبی ہے کہ 64 چارجز لگائے ہیں اور کسی ایک پر پکڑا جائے، اس چارج شیٹ میں کوئی کرپشن کا نام نہیں ہے کہ کرپش کی ہو،نیب سے کہا کہ 11 لوگوں کا نام نہ ڈالے صرف مجھ پر مقدمہ چلائے، اپوزیشن کو ہی ٹارگٹ کرنا ہے تو باقی لوگوں کو مت ذلیل کریں، عدالت میں کیمرے لگنے چاہیں تا کہ عوام ٹرائل دیں سکے، ہم پبلک آفیس ہولڈرز ہیں ہمارا بنیادی مطالبہ ہے کہ عدالت کی کاروائی دیکھائی جائے، نیب کی جانب سے بے بنیاد الزامات لگائے جا رہئے ہیں، بے بنیاد اور جھوٹے الزامات ہر نیب کا گربیان پکڑوں گا، ہماری حکومت آتی ہے تو قانون کے ذریعے ان کے خلاف کاروائی کرے گے۔