مسیحی نوجوان

مسیحی نوجوان سگے بھائی کے ہاتھوں قتل، ملزم گرفتار

ویب ڈیسک(پشاور) پشاور کے علاقے آغہ میر جانی شاہ میں مسیحی نوجوان ٹیلر کو سگے بھائی نے لاٹھی کے پے در پے وار کر کے قتل کر دیا پولیس نے ملزم کو گرفتار کر لیا۔ اتوار کے روز ایس پی سٹی عتیق شاہ نے دیگر افسروں کے ہمراہ پریس کانفرنس میں بتایا کہ مذکورہ واقعہ اتوار کو علی الصبح ساڑھے 4 بجے پیش آیا، پولیس کو اطلاع ملی کہ مسیحی نوجوان نقاش مسیح کو اغوا کے بعد قتل کر کے نعش گھر کے سامنے پھینک دی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ قتل کے واقعہ کے بعد انہوں نے ورثاء سے تفتیش شروع کی تو انہوں نے بتایا کہ مقتول ڈی جے پروگرام کیلئے گیا تھا جبکہ بعد میں اسے اغوا کرکے قتل کیا گیا ہے۔

ایس پی سٹی عتیق شاہ نے بتایا کہ انہیں مقتول کے بھائی زبیر مسیح پر شک گزرا کیونکہ اسکے گلے پر خراشیں تھیں پوچھ گچھ کے دوران زبیر مسیح نے حقائق سے پردہ اٹھا دیا اور بتایا کہ لڑائی جھگڑوں سے تنگ آکر اس نے اپنے بھائی کو لاٹھی کے وار کر کے قتل کیا ہے۔

مقتول کی عمر 24 سال تھی جو ایک ٹیلر تھا جبکہ ملزم کی عمر 30 سال ہے پولیس نے نعش تحویل میں لیکر پوسٹمارٹم کیلئے منتقل کردی جبکہ ایف آئی آر درج کر کے کیس کی مزید تفتیش شروع کردی۔