ریفرنڈم خالصتان

خالصتان کیلئے برطانیہ میں ریفرنڈ م

ویب ڈیسک: بھارت میں سکھوں کے علیحدہ وطن کے قیام کے لیے لندن میں ریفرنڈم کا آغاز ہو گیا ہے۔ خالصتان کے قیام کے لیے ووٹنگ کا عمل شروع ہو گیا ہے اور سکھوں کے الگ وطن خالصتان کا نیا نقشہ بھی جاری کر دیا گیا ہے۔

ریفرنڈم کے لیے ووٹنگ سپریم کورٹ کے عقب میں موجود سرکاری عمارت کوئین ایلزبتھ 2 میں ہو رہی ہے، ووٹنگ کے موقع پر عمارت پر خالصتان کے جھنڈے بھی لگا دیئے گئے ہیں، ریفرنڈم میں 50 ہزار افراد کی آمد متوقع ہے۔ سکھ رہنمائوں کا کہنا ہے کہ بھارتی دبائو کے باوجود برطانوی حکومت نے ریفرنڈم کی اجازت دی جس پر ان کے شکر گزار ہیں۔

مزید پڑھیں:  5 بہنوں کا اکلوتا بھائی قتل، وزیراعلی اور آئی جی سے فوری انصاف کا مطالبہ

سکھ رہنما پرم جیت سنگھ پما کا کہنا ہے کہ ریفرنڈم کی نگرانی غیر جانبدار کمیشن کر رہا ہے جبکہ سکھ رہنما پتوت سنگھ پنوں نے الزام عائد کیا ہے کہ بھارتی حکومت نے ریفرنڈم سے روکنے کیلئے مجھ پر جعلی مقدمات بنوائے۔ سکھ رہنما پتوت سنگھ پنوں کا یہ بھی کہنا ہے کہ ریفرنڈم میں 50 ہزار افراد کی آمد متوقع ہے۔

مزید پڑھیں:  کوہاٹ، شہری علاقوں کے مکین پینے کے صاف پانی کو ترس گئے