داسوڈیم حمل ملوث چارملزمان

داسو ڈیم حملے میں ملوث چار ملزمان افغانستان میں موجود ہونے کی اطلاعات

ویب ڈیسک : خیبر پختونخوا میں اپر کوہستان کے علاقے داسو ڈیم خودکش حملہ کیس میں ملوث دو ملزمان کو سزائے موت سنادی گئی۔ ایبٹ آباد میں انسداد دہشتگردی عدالت نے داسو دہشتگرد حملہ کیس میں دو ملزموں کو 13،13 بار سزائے موت اور 15،15 لاکھ جرمانے کی سزا سنادی۔عدالت نے جرمانے کی عدم ادائیگی پرایک سال اضافی قید کی سزاسنائی گئی۔
مجرمان میں محمد حسین عرف زوان ماما اور محمد ایاز عرف جانباز شامل ہیں۔ مجرمان کو 302دفعہ میں تیرہ سال عمر قید کے ساتھ پندرہ پندرہ لاکھ روپے کا جرمانہ بھی ادا کرنا ہوگا دونوں مجرمان کو سزائے موت سے قبل چودہ چودہ سال قید با مشقت بھی بھگتنا ہو گی۔ انسداد دہشت گردی کی عدالت نے دیگر 4 ملزمان کو اشتہاری قرار دے دیا ، چاروں اشتہاری ملزمان کی افغانستان میں موجودگی کی اطلاعات ہیں۔ ایک پریمیر انٹیلی جنس ادارے کی سی ٹی ڈی اور خصوصی ٹیم نے بالکل بلائنڈ کیس کو نہ صرف حل کیا بلکہ اس کو منطقی انجام تک بھی پہنچایا۔خودکش بمبار سمیت پورا گروپ ایک لمبے عرصے سے دہشت گردی کی کارروائیوں سے منسلک تھا۔ خود کش حملہ میں 9چائنیز، 2ایف سی اہلکار، 2لوکل افراد مجموعی طور پر 13 افراد جاں بحق ہوئے جبکہ 27 چائنیز اور 5 مقامی افراد زخمی ہوئے تھے۔

مزید پڑھیں:  گرمی کی شدید لہر، پاکستان گرم ترین ممالک میں سرفرست