پشاور قبائلی باشندے قتل

پشاور میں قبائلی باشندے سمیت دو افراد کو فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا

ویب ڈسیک : پشاور میںقبائلی باشندہ سمیت دو افراد کو فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا، حیات آباد میں نامعلوم افراد نے قبائلی باشندہ کو قتل کیا جبکہ متنی میں سابقہ دشمنی کی بناء پر شہری کو قتل کرکے نعش میرخیل خوڑ میں پھینک دی گئی۔ واقعات کے مطابق مدعی نیاز مین ولد گل مہران سکنہ علی مسجد جمرود نے پولیس کو بتایا کہ اس کا بھائی محمد یار آفریدی سکنہ حیات آباد فیز2 گھر کے قریب موجود تھا کہ اس دوران نامعلوم موٹرسائیکل سواروں نے فائرنگ کرکے اسے قتل کردیا اورفرا ر ہو گئے۔
مدعی کے مطابق ان کی کسی کے ساتھ کوئی دشمنی یا عداوت نہیں ہے۔ مقتول کا تعلق ضم ضلع سے بتایاجاتا ہے ۔ ادھر متنی میں سابقہ دشمنی کی بناء پر ایک شخص کو قتل کرکے نعش خوڑ میں پھینک دی گئی ہے۔شاہد خان ولد تاج ولی سکنہ میر خیل متنی نے پولیس کو رپورٹ درج کرائی کہ اسے اطلاع ملی کہ اس کے والد کی گولیوں سے چھلنی نعش میر خیل خوڑ میں پڑی ہے.
وہ موقع پر پہنچا تو اس کے والد کی نعش پڑی تھی ۔مدعی نے الزام لگایا کہ اس کے والد کو شیر عالم اور سفر علی پسران گل اور زر شاد ولد غلام حبیب ساکنان میر خیل متنی نے فائرنگ کرکے قتل کیا ہے۔ پولیس نے دونوں بھائیوں سمیت تین افراد کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے۔

مزید پڑھیں:  امریکی یونیورسٹی میں اسرائیل مخالف احتجاج پر 100سے زائد طلباگرفتار