ترکیہ اور شام

تباہ کن زلزلہ، ترکیہ اور شام میں جانبحق ہونے والوں کی تعداد 12 ہزار کے قریب ہوگئی

ترکیہ اور شام میں تباہ کن زلزلے سے مجموعی طور پر اموات کی تعداد 12 ہزار کے قریب پہنچ گئی ہے، ترکیہ میں 9 ہزار 57 اور شام میں 2 ہزار 662 افراد جانبحق ہوئے ہیں۔
ویب ڈیسک: غیرملکی میڈیا کے مطابق متاثرہ علاقوں میں زلزلے کے بعد آفٹر شاکس کا سلسلہ جاری ہے، ہولناک زلزلے سے اب تک ترکیہ اور شام میں تباہ کن زلزلے سے مجموعی طور پر اموات کی تعداد 12 ہزار کے قریب پہنچ گئی ہے، شام میں 2 ہزار 470 اور ترکیہ میں 9 ہزار 500 سے زائد افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔ اسپتال منتقل کیے گئے اور ملبے سے مزید نکلنے والے زخمیوں کی تعداد بھی ہزاروں میں بتائی جا رہی ہے۔
ترک وزیر صحت نے بتایا کہ ملبے تلے دبنے والے 8 ہزار افراد کو ریسکیو کرلیا گیا ہے جبکہ مزید کی تلاش جاری ہے اور اموات میں اضافے کا بھی خدشہ ہے جبکہ بے گھر ہونے والے 3 لاکھ 80 ہزار شہریوں کو رہائش فراہم کردی گئی ہے۔
ترک صدر رجب طیب اردوان نے ملک بھر میں ایک ہفتے کے سوگ کا اعلان کر دیا جس کے دوران قومی پرچم سرنگوں رہے گا جب کہ تعلیمی ادارے بند رہیں گے۔ ترک صدر نے زیادہ متاثر 10 صوبوں میں 3 ماہ کیلیے ایمرجنسی کا اعلان بھی کیا ہے۔
زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں امدادی کارروائیاں اور ملبے تلے دبے افراد کو نکالنے کا کام جاری ہے۔ زلزلے سے سڑکیں تباہ ہونے اور بارش کے باعث امدادی کارروائیوں میں مشکلات کا سامنا ہے۔
وزیراعظم شہباز شریف نے ترکیہ میں زلزلے سے ہونے والے جانی نقصان پر ترکیہ کی حکومت اور عوام سے اظہار تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مشکل کی گھڑی میں برادر ملک ترکیہ اور ترک عوام کے ساتھ کھڑے ہیں

مزید پڑھیں:  لوئر دیر، شفیع نامی قیدی کی جیل میں خودکشی