الیکشن نئی مردم شماری پر ہونگے

الیکشن نئی مردم شماری پر ہونگے یا پرانی پر، مشترکہ مفادات کونسل میں آج فیصلے کا امکان

ملک میں عام انتخابات 2017 کی مردم شماری کی بنیاد پر ہوں گے یا 2023 کی مردم شماری کے مطابق، فیصلہ آج مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس میں ہونے کا امکان ہے۔
ویب ڈیسک: وزیراعظم شہباز شریف نے مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس آج دن 12 بجے طلب کر رکھا ہے جس میں چاروں صوبوں کے وزرائے اعلیٰ اور وفاقی وزراء شریک ہوں گے۔
شہباز شریف کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں نئی مردم شماری کی رپورٹ پیش کی جائے گی، اگر سی سی آئی نے مردم شماری منظور کر لی تو پھر آئندہ عام انتخابات نئی مردم شماری کے مطابق ہوں گے جن کے لیے نئی حلقہ بندیاں کرنی پڑیں گی۔
اجلاس میں ڈیجیٹل مردم شماری کے نتائج اور رپورٹ کا جائزہ لیا جائے گا جبکہ صوبائی حکومتیں ڈیجیٹل مردم شماری کے نتائج پر اپنا اپنا مؤقف پیش کریں گی۔
خیال رہے کہ سابق حکومت بھی 2023 کے انتخابات نئی مردم شماری کے تحت کرانے کا فیصلہ کر چکی ہے، فیصلہ 2021 میں چیئرمین پی ٹی آئی کی زیر صدارت مشترکہ مفادات کونسل اجلاس میں کیا گیا تھا۔
پی ٹی آئی حکومت میں کونسل نے اس بات کی منظوری دی تھی سال 2023 میں ہونے والے انتخابات نئی مردم شماری کے تحت ہوں گے، ساتویں مردم شماری مکمل کر کے الیکشن کمیشن کو حلقہ بندیاں مکمل کرنے کے لیے ڈیٹا دیا جائے۔

مزید پڑھیں:  چار سسرالیوں کو قتل کرنے والا ملزم پولیس مقابلے میں مارا گیا