پاک امریکہ رابطوں میں تیزی،8دنوں میں تین امریکی حکام کادورہ

ویب ڈیسک: پاکستان اور امریکا کے درمیان اعلیٰ سطحی رابطوں میں تیزی آگئی ہے،8 دنوں میں تین اعلیٰ ترین امریکی حکام پاکستان کا دورہ کر رہے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغانستان تھامس ویسٹ کی دفتر خارجہ میں نگران وزیرِخارجہ جلیل عباس جیلانی سے ملاقات ہوئی ہے۔
ذرائع کے مطابق ملاقات میں غیر قانونی غیر ملکیوں کے انخلا اور پاکستان میں دہشت گردی کے لئے افغان سرزمین کے استعمال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ امریکہ میں آباد کاری کے منتظر 25 ہزار افغانیوں کے انخلا پر گفتگو ہوئی۔ ملاقات میں کالعدم ٹی ٹی پی اور دیگر دہشت گرد تنظیموں کے خاتمے کی حکمت عملی بھی زیر غور آئی۔
وزارت خارجہ حکام کا بتانا ہے کہ پاکستان اورامریکا کے درمیان باہمی روابط میں حالیہ دنوں میں غیر معمولی اضافہ ہوا ہے۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں 4 سے6 دسمبر کے دوران امریکی اسسٹنٹ سیکرٹری برائے مہاجرین جولیتا والس نے پاکستان کا دورہ کیا جس کے بعد 7 سے 9 دسمبر تک امریکی خصوصی مندوب برائے افغانستان تھام ویسٹ پاکستان کے دورے پر ہیں۔ ان کا دورہ مکمل ہوتے ہی 9 دسمبر کو پرنسپل ڈپٹی اسسٹنٹ سیکرٹری الزبتھ ہورسٹ پاکستان آئیں گی۔

مزید پڑھیں:  توہین عدالت کیس میں ڈی سی اسلام آباد کا وارنٹ جاری