غزہ میں انسانی بحران

غزہ میں انسانی بحران کا سنگین خطرہ لاحق ہے،سیکریٹری جنرل انتھونیو گوتریس

ویب ڈیسک: یو این سیکریٹری جنرل انتھونی گوئترس کا کہنا ہے کہ غزہ میں انسانی بحران کا سنگین خطرہ ہے.
سیکریٹری جنرل انتھونیو گوئتریس نے مزید کہا کہ حماس کی جارحیت کبھی بھی فلسطینی عوام کی اجتماعی سزا کا جواز نہیں بن سکتی۔
جنرل سیکرٹری کا کنا تھا کہ غزہ میں انسانی ہمدردی کی بنیاد پر فوری جنگ بندی کی جائے، غزہ میں انسانی بحران کا سنگین خطرہ لاحق ہے۔
سیکریٹری جنرل نے کہا کہ غزہ میں کوئی بھی جگہ محفوظ نہیں، غزہ میں رہنے والے لوگ زندگی کی تلاش میں ایک سے دوسری جگہ منتقل ہو رہے ہیں۔
یو این سیکرٹری جنرل نے وضاحت کی کہ غزہ کی 80فیصد آبادی بے گھر ہو چکی ہے، انہوں نے کہا کہ غزہ میں خوراک، ایندھن، پانی اور ادویات کی کمی ہے جس سے بیماریوں کے خطرے کا بھی سامنا ہے۔
یاد رہے امریکا نے ایک بار پھر اقوام متحدہ کی سیکورٹی کونسل میں انسانی بنیادوں پر غزہ میں جنگ بندی کیلئے پیش کی گئی قرارداد ویٹو کردی ہے۔
قبل ازیں امریکہ نے اسی سال اکتوبر کے مہینے میں اقوام متحدہ کی سیکورٹی کونسل میں انسانی بنیادوں پر برازیل کی جانب سے غزہ جنگ بندی کی قرارداد بھی ویٹو کر دی تھی۔ برازیل کی جانب سے پیش کی گئی قرارداد میں انسانی بنیادوں پر جنگ بندی اور امداد کی ترسیل کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

مزید پڑھیں:  پاکستان کی غیر یقینی صورتحال آئی ایم ایف پروگرام کیلئے خطرہ قرار