بلاول

تین بار فیل وزیراعظم چوتھی بار کون سا تیر مارے گا‘بلاول

ملک کے معاشی حالات ایسے نہیں کہ ہم انتقام کی سیاست یا کھلاڑی کو برداشت کریں، 8 فروری کو عوام ایک بار پھر پاکستان پیپلز پارٹی کو منتخب کریں گے
ویب ڈیسک :پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے کہا کہ میاں صاحب کا ایک بار پھر مطالبہ ہے کہ دو تہائی اکثریت دلوائی جائے، جو تین بار وزیراعظم بن کر فیل رہا وہ چوتھی بار کیا تیر مارے گا۔
ہمیں پتہ ہے میاں صاحب چوتھی بار آکر کیا کریں گے، میاں صاحب پھر انہی سے پنگا لیں گے جو نے انہیں دو تہائی اکثریت دلوائیں گے۔
تیمر گرہ میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے اپنے سیاسی مخالفین کو چن چن کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ملک کے معاشی حالات ایسے نہیں کہ ہم انتقام کی سیاست یا کھلاڑی کو برداشت کریں، 8 فروری کو عوام ایک بار پھر پاکستان پیپلز پارٹی کو منتخب کریں گے۔
عمران خان کو ہدف تنقید بناتے ہوئے بلاول کا کہنا تھا بانی پی ٹی آئی کو جو موقع ملا تھا وہ انہوں نے انتقامی سیاست میں ضائع کر دیا، زمان پارک کے دور میں انتقامی سیاست پر زور دیا گیا، وعدہ نیا پاکستان کا تھا مگر جب حکومت میں آئے تو وہی کام کیا جو پہلے ہوتا تھا۔
چیئرمین پیپلز پارٹی کا مزید کہنا تھا میاں صاحب نے ان سے لڑائی کی جو انہیں اقتدار میں لائے اور دو تہائی اکثریت دلوائی، دوسری بار میاں صاحب کو لڑائی کی وجہ سے باہر جانا پڑا اور 10 سال آرام کرنا پڑا، 2013 میں میاں صاحب پھر انہی سے لڑے جنہوں نے انہیں دو تہائی اکثریت دلوائی تھی۔
ان کا کہنا تھا مجھے کیوں نکالا کہتے کہتے وہ لندن کے ایون فیلڈ پہنچے اور وہاں سے انقلاب لانے لگے، میاں صاحب پھر انہی سے پنگا لیں گے جو نے انہیں دو تہائی اکثریت دلوائیں گے۔
چیئرمین پیپلز پارٹی کا کہنا تھا میاں صاحب ووٹ کی عزت کی سیاست کریں ووٹ کی بے عزتی چھوڑیں، میاں صاحب تین بار سلیکٹ ہوئے چوتھی بار تو الیکٹ ہوکر آجائیں، ایک بار منتخب ہو کر آجائیں میں بھی مانوں گا عوام بھی مانیں گے، میاں صاحب چوتھی بار بھی سلیکٹ ہوکر آنا چاہتے ہیں تو سو بسم اللہ، چوتھی بار بھی سلیکٹ ہو کر آئے تو نہ عوام مانیں گے نہ میں مانوں گا۔

مزید پڑھیں:  پنجاب اسمبلی کا اجلاس رواں ماہ کے آخری ہفتے طلب کر نے کا فیصلہ