رفح پربمباری

رفح پربمباری ، بچوں اورخواتین سمیت 100 شہید

ویب ڈیسک :اسرائیل بربریت اور حملوں کے نتیجے میں داخلی طور پر بے گھر ہونے والے فلسطینیوں سے بھررفح شہر پر اسرائیلی بمباری میں کم سے کم 100 افراد شہید جبکہ 230 کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔
مرکز اطلاعات فلسطین نے سوشل میڈیا اکاو¿نٹ پر اطلاع دی ہے کہ مرنے والوں میں زیادہ تعداد بچوں اور خواتین کی ہے، جبکہ اسرائیل نے رفح کے مختلف علاقوں میں دو مساجد سمیت متعدد گھروں کو نشانہ بنایا ہے۔
اسرائیلی حملوں میں زخمی ہونے والے دسیوں زخمی ملبے تلے دبے ہوئے ہیں، ادھر اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ رفح آپریشن میں حماس کے پاس یرغمال دو اسرائیلی قیدیوں کو بھی رہا کروا لیا گیا ہے جن کی صحت اچھی بتائی جاتی ہے، اوراب ہسپتال معائنے کے لیے منتقل کر دیا گیا ہے۔
رہا کروائے یرغمالیوں کی شناخت 70 سالہ لویس ہر اور 60 سالہ فرنانڈو مرمان کے طور پر کرائی گئی ہے۔
خبررساں ادارے کے مطابق اسرائیلی فوج نے کہا ہے کہ اس نے جنوبی غزہ پر ’متعدد فضائی حملے‘ کیے جو اب ’ختم ہوگئے‘ ہیں۔
خبررساں ادارے نے رفح کے شہریوں سے رابطہ کیا جس میں انہوں نے بتایا کہ شدید بمباری سے علاقے میں بہت خوف و ہراس پھیل گیا کیونکہ حملے شروع ہونے کے وقت بہت سے لوگ سو رہے تھے۔

مزید پڑھیں:  سندھ وزارت اعلیٰ، فریال تالپور کا نام بھی زیرغور