پشاور، سنگین مقدمات میں ملوث ملزم اسفندیار قتل، لواحقین کا احتجاج

ویب ڈیسک: جیل میں منتقلی سے قبل میڈیکل چیک اپ کیلئے سنگین مقدمات میں ملوث ملزم اسفندیار ولد جاوید کو سابقہ دشمنی کی بنا پر فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا۔
ایس پی کینٹ وقاص رفیق کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ موقع پر موجود پولیس اہلکاروں نے ملزم ندیم ولد یوسف کو اسلحہ پستول سمیت گرفتار کرلیا۔ ملزم اور مقتول کے مابین سابقہ قتل مقاتلے کی دشمنی چلی آرہی ہے۔
دوسری جانب متولین کےلواحقین نے نعش سڑک پر رکھ کر جی ٹی روڈ کو بند کر دیا اور اس دوران پولیس کے خلاف نعرے بازی کی۔
ذرائع کے مطابق احتجاج کے باعث ٹریفک کا نظام درہم برہم ہو گیا اور سڑک پر گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں۔
مظاہرین کا اس موقع پر کہنا تھا کہ پولیس کی تحویل میں ملزم کوکیسےقتل کیا۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ اتنے حساس مقام پر اسلحہ لیکر جانا پولیس اہلکاروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔ پولیس اہلکار کیا کر رہے تھے اس وقت۔
مظاہرین نے مطالبہ کیا ہے کہ ذمہ داروں کےخلاف سخت کاروائی کی جائے۔
یاد رہے کہ سنگین مقدمات میں‌گرفتار ملزم کو سابق دشمنی میں‌قتل کر دیا گیا .

مزید پڑھیں:  چین میں طوفانی بارشیں، مواصلاتی نظام درہم برہم، متعدد افراد زخمی