اقوام متحدہ میں رکنیت :امریکا نے فلسطین کی درخواست ویٹو کردی

ویب ڈیسک: امریکا نے فلسطین کی اقوام متحدہ میں رکنیت سے متعلق درخواست ویٹو کردی ،سکیورٹی کونسل کے ارکان کی اکثریت کی حمایت کے باوجود فلسطین کی اقوام متحدہ کی رکنیت سے متعلق قرارداد منظور نہ ہوسکی۔
خبرایجنسی کے مطابق اجلاس میں سلامتی کونسل کے 12ارکان نے فلسطین کو اقوام متحدہ کی رکنیت دینے کی حمایت کی تھی ۔
فلسطین کی اقوام متحدہ کی رکنیت سے متعلق قراردار پر برطانیہ اور سوئیزرلینڈ نے ووٹنگ میں حصہ نہیں لیا۔
فلسطینی ایوان صدر نے ا مریکی ویٹو پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ امریکا کا درخواست ویٹو کرنے کا اقدام غیر منصفانہ اور غیر اخلاقی ہے، امریکی اقدام کی مذمت کرتے ہیں۔
فلسطینی مندوب ریاد منصور نے جذباتی انداز اپناتے ہوئے کہا کہ فلسطینیوں کے عزم کوشکست نہیں دی جاسکتی، ہماری کوششیں جاری رہیں گی۔
اسرائیل کے وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ سلامتی کونسل میں شرمناک تجویز مسترد کردی گئی، دہشتگردی پر فلسطینی ریاست کو انعام نہیں دیاجائیگا، اسرائیلی وزیرخارجہ نے ویٹوکرنے کے امریکی اقدام کی تعریف کی۔
اسرائیلی مندوب کی جانب سے ووٹ دینے والے ممالک پر تنقید کرتے ہوئے کہا گیا کہ فلسطین کو اقوام متحدہ میں غیررکنی مبصرکی حیثیت حاصل ہے،مکمل رکنیت کیلئے سلامتی کونسل اور جنرل اسمبلی کے دوتہائی اراکین کی حمایت لازم ہے، غزہ، مغربی کنارے اورمقبوضہ بیت المقدس پرمشتمل ریاست چاہتے ہیں۔
اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس نے کہا تھا کہ دوریاستی حل میں پیشرفت نہ کی گئی تو تشدد کا خطرہ بڑھے گا۔

مزید پڑھیں:  ریئل اسٹیٹ سیکٹر بھی آئی ایم ایف کے ریڈار پر آ گیا