وفاقی بجٹ

وفاقی بجٹ آئی ایم ایف کی مشاورت سے تیار کرنے کا فیصلہ

ویب ڈیسک: وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال کا بجٹ آئی ایم ایف کی مشاورت سے تیار کرنے اور سخت معاشی پالیسی جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے ۔
ذرائع کے مطابق حکومت نے اس حوالے سے وفاقی حکومت نے آئی ایم ایف کو تحریری یقین دہانی کرا دی ہے۔
دستاویزات کے مطابق وزارت خزانہ آئی ایم ایف کی مکمل مشاورت سے بجٹ تیار کررہا ہے، وفاقی حکومت نے بجٹ سرپلس سے متعلق صوبوں سے تصدیق کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور آئندہ مالی سال پرائمری سرپلس جی ڈی پی کے ایک فیصد رکھنے کا پلان ہے۔
دستاویز کے مطابق وفاقی بجٹ کی تیاری پر پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مذاکرات جاری ہیں، آئی ایم ایف بجٹ میں اپنی شرائط پیش کر رہا ہے، حکومت کو آئی ایم ایف کی شرائط پر مکمل عملدرآمد کرنا ہوگا۔
ذرائع کا بتانا ہے کہ وفاقی حکومت نے آئندہ مالی بجٹ میں سخت معاشی پالیسیاں جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔
دوسری جانب نئے مالی سال کے بجٹ کی تیاریوں کے سلسلے میں ایف بی آر ہیڈ کوارٹرز میں عام افراد کے داخلے پر پابندی عائد کردی گئی ہے
تمام ایف بی آر افسران و ملازمین کو سرکاری شناختی کارڈ آویزاں کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

مزید پڑھیں:  طالبان رجیم میں افغان خواتین کی زندگی اجیرن ، روزگار کے دروازے بھی بند