لنڈی کوتل، ظالمانہ لوڈشیڈنگ کے خلاف تمام اقوام سراپا احتجاج

ویب ڈیسک: بجلی کی ظالمانہ لوڈشیڈنگ کے خلاف لنڈی کوتل میں تمام اقوام نے مشترکہ طور پر احتجاج کیا جس میں بلدیاتی نمائندہ گان، سیاسی جماعتوں کے رہنما، قومی مشران اور مقامی لوگوں نے کثیر تعدا میں شرکت کی۔
احتجاج کرتے ہوئے مشتعل مظاہرین بجلی گریڈ سٹیشن میں داخل ہو گئے اور گریڈ سٹیشن کے اندر احتجاجی دھرنا دیا۔ اس دوران گریڈ سٹیشن میں تمام تر فیڈرز بند کر دیئے گئے۔
احتجاح کرتے مظاہرین نے کہا کہ بار بار معاہدوں کے باوجود بجلی کی طویل بندش نامنظور ہے۔ ٹیسکو حکام کے ساتھ 6 گھنٹے لوڈ شیڈنگ کا معاہدہ کرنے کے باوجود بجلی فراہم نہیں کی جاتی۔
مظاہرین کا کہنا تھا کہ 48 گھنٹوں میں صرف دو گھنٹوں کے لئے بجلی سپلائی کی جاتی ہے جس سے مسائل بڑھ رہے ہیں۔ اس قدر طویل اور ظالمانہ لوڈشیڈنگ سے علاقے میں پانی ٹیوب ویلز بند پڑے ہیں اور پانی کی شدید قلت پیدا ہو گئی ہے۔
لنڈی کوتل میں تمام مشران نے مشترکہ طور پر کہا کہ معاہدے کے مطابق 6 گھنٹے بجلی سپلائی فراہمی یقینی بنائی جائے۔
مشران کا کہنا تھا کہ مطالبات ماننے تک گریڈ سٹیشن میں احتجاجی دھرنا جاری رہے گا۔

مزید پڑھیں:  امریکہ میں سکھ رہنما کے قتل کی سازش میں مودی سرکار ملوث نکلی