یورپی پارلیمنٹ کے انتخابات، روایتی سیاسی اسٹیبلشمنٹ کا صفایا ہوگیا

ویب ڈیسک: یورپ کی سیاست نئی سمت اختیار کرگئی۔ یورپی پارلیمنٹ کے انتخابات میں انتہائِ دائیں بازو کی حماعتوں کی کامیابی کے بعد روایتی سیاسی اسٹیبلشمنٹ کا صفایا ہوگیا۔
ان انتخابات مِں سینٹر رائٹ جماعتوں کو بھی بھاری نقصان اٹھانا پڑا۔
720 رکنی یورپی پارلیمنٹ کے انتخابات کے دوران یورپی یونین کے 27 رکن ممالک میں ہوئے انتخابات ہوئے۔
اس دوران ایگزٹ پولز کے مطابق جرمنی اور فرانس سمیت زیادہ تر رکن ممالک میں انتہائی دائیں بازو کی جماعتوں کے امیدوار کامیاب رہے اور روایتی سیاسی اسٹیبلشمنٹ کا صفایا ہوگیا۔

مزید پڑھیں:  سندھ میں ہر ماہ ایچ آئی وی کے 260نئے کیسز کا انکشاف

یورپی پارلیمنٹ میں ہونیوالے انتخابات کے ابتدائی نتائج کے مطابق گرین اور لبرل رینیو پارٹیوں کے 20، 20 نشستیں کھو دینے کے ساتھ ہی یورپی قوانین کی حمایت کمزور پڑنے کا خدشہ ہے۔
جرمن چانسلر شُولز کی سوشل ڈیموکریٹس کو 14 فیصد اور گرینز کو 12 فیصد ووٹ ملنے کی پیشگوئی کی گئی ہے۔

مزید پڑھیں:  خیبر پختونخوا میں لوڈ شیڈنگ خاتمے کیلئے بجلی چوری روکنا ہوگی،وفاقی وزیر توانائی