پنجاب اسمبلی کی ممکنہ تحلیل

پنجاب اسمبلی کی ممکنہ تحلیل روکنے کیلئے ہر حد تک جائینگے، ن لیگ کا اعلان

پاکستان مسلم لیگ کے رہنما عطا تارڑ کا کہنا ہے کہ پنجاب اسمبلی کی ممکنہ تحلیل روکنے کے لیے ہر حد تک جائیں گے
ویب ڈیسک: چیئرمین پاکستان تحریک انصاف اور سابق وزیراعظم عمران خان کی جانب سے اسمبلیاں تحلیل کرنے کے اعلان پر مسلم لیگ ن کا ہنگامی مشاورتی اجلاس ماڈل ٹاون میں ہوا، چیئرمین پی ٹی آئی کے اعلان کے سیاسی اعلان کا مقابلہ کرنے کے لیے مسلم لیگ ن کے سر جوڑ کر بیٹھ گئے۔
مسلم لیگ ن پنجاب کی صوبائی پارلیمانی ایڈوائزری گروپ نے حمزہ شہباز کی سربراہی میں 2 گھنٹوں سے زائد بھرپور مشاورت کی، مشاورت میں اسمبلی تحلیل کرنے کے منصوبے کو روکنے کیلئے پنجاب میں گورنر راج لگانے سمیت دیگر آپشنز بھی زیر غور آئے۔
بعدازاں وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے انسداد منشیات عطا اللہ تارڑ کے ہمراہ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب اسمبلی کی ممکنہ تحلیل روکنے کے لیے ہر حربہ استعمال کریں گے۔
معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ پنجاب کے خلاف تحریک عدم اعتماد اور گورنر کی جانب سے وزیراعلی کو اعتماد کا ووٹ لینے سمیت مختلف آپشنز زیرغور ہیں۔
سپریم کورٹ میں دائر مسلم لیگ ن کی پٹیشن کو سننے کی اپیل کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے اراکین بھی اسمبلی ٹوٹنے کے حق میں نہیں۔
لیگی ترجمان عظمی بخاری نے کہا کہ عمران خان اپنی مایوسی کی وجہ سے پنجاب اسمبلی تحلیل کرنا چاہتے ہیں۔
ان کا کہنا تھا کہ پرویز الٰہی کو نہ جانے کیا غلط فہمی ہے، پنجاب اسمبلی کسی کی جاگیر نہیں۔

مزید دیکھیں :   مردان اورچارسدہ میں پولیس شہداء کے گھر آفیسرزکی آمد