وزیراعلی محمود خان

وزیراعلی محمود خان نے اسمبلی تحلیل کی ایڈوائس گورنر کو بھیج دی

وزیراعلی محمود خان نے خیبرپختونخوا اسمبلی تحلیل کرنے کی سمری پر دستخط کر کے اُسے عمل درآمد کے لیے گورنر غلام علی کو ارسال کردیا۔
ویب ڈیسک: تفصیلات کے مطابق وزیراعلی محمود خان نے 17 جنوری کی رات 9 بجے اسمبلی تحلیل کی سمری پر دستخط کر کے اسے گورنر کو ارسال کیا، اگر 48 گھنٹوں میں گورنر نے اسمبلی تحلیل نہ کی تو آئینی و قانونی طور پر اسمبلی 19 جنوری کی رات 9 بجے خود ہی تحلیل ہوجائے گی۔
اس حوالے سے اپنی ٹوئٹ میں رہنما تحریک انصاف فواد چوہدری نے کہا کہ وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے پارٹی کے فیصلے اور عمران خان کی ہدایت کے مطابق اسمبلی کی تحلیل کی سمری گورنر کو بھجوا دی ہے، 48 گھنٹوں میں اسمبلی تحلیل نہ کی گئی تو جمعرات کو ازخود اسمبلی تحلیل ہو جائے گی، اس فیصلے سے ملک میں عام انتخابات کی راہ ہموار ہو گی۔
خیال رہے کہ گزشتہ برس اپریل میں قومی اسمبلی میں تحریک عدم اعتماد کے نتیجے میں وزارت عظمیٰ سے فارغ ہونے والے عمران خان نے حکومت سے فوری نئے انتخابات کا مطالبہ کردیا تھا، لیکن ان کے بار ہا مطالبے کے باوجود حکومت نے قبل از وقت الیکشن سے انکار کیا جس پر عمران خان نے کے پی اور پنجاب اسمبلیاں تحلیل کرعندیہ دیا تھا۔
عمران خان کی ہدایت پر عمل کرتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الہیٰ نے 12 جنوری کو اسمبلی تحلیل کرنے کی سمری گورنر پنجاب کو بھیجی تھی جنہوں نے اس پر دستخط نہ کیے اور 48 گھنٹے بعد پنجاب اسمبلی ازخود تحلیل ہوگئی جبکہ آج وزیراعلیٰ کے پی نے بھی گورنر کو اسمبلی تحلیل کرنے کی ایڈوائس بھیج دی ہے۔

مزید دیکھیں :   تباہ کن زلزلہ، ترکیہ اور شام میں جانبحق ہونے والوں کی تعداد 12 ہزار کے قریب ہوگئی