ذکاء اشرف تبدیلی

پی سی بی میں تبدیلی کا عندیہ، ذکاء اشرف کو ہٹائے جانے کا امکان

ویب ڈیسک: آئِی سی سی ورلڈ کپ سے ڈیڑھ ماہ قبل ایک بار پھر پی سی بی میں تبدیلی کے بادل منڈلانے لگے ہیں، رواں سال جولائی میں پاکستان کرکٹ بورڈ کی منیجمنٹ کمیٹی کے چیئرمین مقرر ہونے والے ذکاء اشرف کو ایک بار پھر تبدیل کئَے جانے کا امکان ہے، اس سے قبل ان کو پی سی بی پیٹرن وزیراعظم شہباز شریف نے پی سی بی بورڈ آف گورنرز میں نامزد کیا تھا لیکن عدالتی حکم امتناع کی وجہ سے چیئرمین منتخب نہیں ہو پائے تھے جس کے بعد منیجمنٹ کمیٹی بنا کر انہیں اس کا سربراہ مقرر کیا گیا تھا۔ حکومت کی مدت پوری ہونے کے بعد الیکشن کمیشن کی جانب سے سیاسی بنیادوں پر ہونے والی تمام تقرریوں کو منسوخ کرنے کا حکم نامہ جاری کیا گیا جسےعملی جامہ پہنانے کی سعی کی گئِی اور وزارت بین الصوبائی رابطہ نے ذکاء اشرف سمیت دو ناموں پر وزیراعظم کے احکامات کیلئے خط لکھ دیا ہے۔
وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری کو لکھے گئے خط میں سیکرٹری آئی پی سی نے لکھا ہے کہ وزارت کی زیر نگرانی ذکاء اشرف اور فیڈرل لینڈ کمیشن کے چیئرمین پیر سید احمد نواز شاہ کے نام ہیں، ان کے مستقبل کے حوالے سے وزیراعظم آفس مزید ہدایات دیں۔ اگر ذکاء اشرف کو بھی عہدے سے ہٹا دیا جاتا ہے تو نیا آنے والا چیئرمین ایک سال سے کم وقت میں پی سی بی کا چوتھا چیئرمین ہوگا۔ یاد رہے کہ آئی سی سی ورلڈ کپ سر پر ہے اس دوران پی سی بی میں تبدیلی سے قومی ٹیم کی پرفارمنس متاثر ہونے کا بھی احتمال ہے کیونکہ اگر ذکاء اشرف کو ہٹایا جاتا ہے تو ان کی جانب سے کی گئی تمام تقرریاں بھی نشانے پر آ سکتی ہیں۔

مزید پڑھیں:  خیبر پختونخوا حکومت کا ریسٹ ہاؤسز کی لیز پالیسی تبدیل کرنے کا فیصلہ