چیونٹیاں کینسر کی تشخیص

چیونٹیاں بھی اب کینسر کی تشخیص کر سکیں گی

چیونٹیوں کی ایک خاص نسل مستقبل میں موذی مرض کینسر کی تشخیص کے لیے استعمال کی جائے گی۔

ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق تحقیق سے پتا چلتا ہے کہ چیونٹیوں کی ایک نئی نسل اب کینسر کے خلیات کا پتہ لگا سکتی ہے۔ فرانس کے محققین کے ایک گروپ نے چیونٹیوں کی ایک نوع دریافت کی جو ناقابلِ یقین حِس کی مالک ہے، اس نئی نوع کی چیونٹی کو Formica fusca کہا جاتا ہے۔

کینسر کی تشخیص عام طور پر بہت مہنگی ہوتی ہے۔ اس سے پہلے کتوں کو بھی کینسر کے خلیوں کو سونگھنے کیلئے استعمال میں لایا گیا لیکن اس عمل میں زیادہ وقت لگتا ہے۔اس دریافت سے محققین کو امید ہے کہ کینسر کا جلد پتا لگانا آسان اور سستا ثابت ہوگا۔

فرانسیسی نیشنل سینٹر فار سائنٹیفک ریسرچ (سی این آر ایس) نے بدھ کے روز جاری ایک بیان میں کہا کہ چیونٹیوں کو کینسر کی تشخیص کے استعمال کے طریقہ کار کی افادیت کا اندازہ اب انسان پر کلینکل ٹرائلز کے ذریعے کیا جائے گا۔
بیان میں کہا گیا کہ یہ پہلا مطالعہ ظاہر کرتا ہے کہ چیونٹیوں سے کینسر کی تشخیص کم قیمت اور مؤثر ثابت ہوگی۔

مزید دیکھیں :   منکی پاکس کے بڑھتے ہوئے کیسز خطرے کی گھنٹی