جان بچانے والی ادویات کی قلت

پشاور، جان بچانے والی 40 سے زائد ادویات کی قلت

ویب ڈیسک: صوبائی دارالحکومت پشاور میں جان بچانے والی 40 سے زائد ادویات کی قلت ہوگئی ہے جس کے باعث مریضوں کی مشکلات میں اضافہ ہوگیا ہے۔ ذرائع کے مطابق دل، شوگر، بلڈ پریشر، کینسر اور مرگی سمیت کئی بیماریوں کی ادویات پشاور کی مارکیٹوں سے غائب ہیں جس کے باعث شہری پریشانی سے دوچار ہیں تاہم بعض دکانداروں کے پاس ادویات ہیں تاہم وہ بلیک میں فروخت کر رہے ہیں۔
دوسری جانب پاکستان کیمسٹ اینڈ ڈرگسٹ ایسوسی ایشن نے دواؤں کی عدم دستیابی کا ملبہ دواساز کمپنیوں پر ڈال دیا۔ ان کا کہنا ہے کہ ادویات میں استعمال ہونے والا مٹیریل مہنگا ہوا ہے جس کے باعث کمپنیوں نے فراہمی میں کمی کر دی ہے، قیمتیں بڑھنا بھی ادویات کی قلت کا باعث ہے۔
خیال رہے کہ ایک سال کے دوران جان بچانے والی ادویات کی قیمتوں میں 100 سے 200 فیصد تک اضافہ ہوا ہے۔ شہریوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ جان بچانے والی ادویات کی ذخیرہ اندوزی اور مہنگے داموں بیچنے والوں کے خلاف فوری کارروائی کی جائے۔

مزید پڑھیں:  افغانستان میں مسافر بس حادثے کا شکار ،17افراد جاں بحق