بشریٰ رحمان کا انتقال

معروف ناول نگار اور مصنفہ بشریٰ رحمان کا کورونا وائرس سے انتقال

معروف ناول نگار،کالم نگار،مصنفہ،شاعرہ، ڈرامہ نویس ،ادیبہ اور سابق پارلیمنٹیرین بشریٰ رحمٰن 77 برس کی عمر میں انتقال کرگئیں۔

بشریٰ رحمٰن کے بیٹے حسن نے والدہ کی وفات کی تصدیق کی اور بتایا کہ اُن کی والدہ کورونا میں مبتلا اور عرصے سے بیمار تھیں۔

بشریٰ رحمٰن29 اگست 1944ءکو بہاول پور میں پیدا ہوئیں، بشریٰ رحمٰن کی شادی لاہور کے صنعتکار میاں عبدالرحمٰن سے ہوئی۔ ۔ بشریٰ رحمن نے 1983 میں اپنے سیاسی کیرئیر کا آغاز کیا۔1985ء اور1988ء میں رکن پنجاب اسمبلی بنیں، 2002 ءاور 2008 ء میں مسلم لیگ ق کے ٹکٹ پر رکن قومی اسمبلی رہیں۔ انہوں نے 13سے زائد کتابیں لکھیں ساتھ ہی وہ طویل عرصے تک کالم بھی لکھتی رہیں۔ بشریٰ رحمن کوادبی خدمات پرستارہ امتیازسے نوازا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:کورونا نے مزید 38 افراد کی زندگیوں کو نگل لیا

بشریٰ رحمٰن کی نمازجنازہ آج بعد نمازعصر احمد بلاک نیو گارڈن ٹاؤن میں ادا کی جائے گی۔

وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار نے سوگوارخاندان سے اظہارتعزیت اورہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بشریٰ رحمان اپنی نوعیت کی منفرد اوراعلی ادیبہ تھیں۔ انہوں نے اپنے ادبی عہد میں کئی نسلوں کومتاثرکیا۔ مرحومہ بشریٰ رحمن کی ادبی خدمات تا دیریاد رکھی جائیں گی۔

مزید دیکھیں :   نوازشریف کی سیاست ختم کرنے والی جماعت کرچی کرچی ہو گئی، مریم نواز