صحافی صدف نعیم

صحافی صدف نعیم کو دھکا دیا گیا، تحقیقات کرائی جائیں: رانا ثنا اللہ

وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ نے لانگ مارچ کے دوران کنٹینر کے نیچے آکر جاں بحق ہونے والی صحافی صدف نعیم کی موت کی تحقیقات کا عندیہ دے دیا
ویب ڈیسک: ٹوئٹر پر ایک بیان میں پی ٹی آئی لانگ مارچ میں کنٹینر کےنیچے آکر جاں بحق ہونے والی خاتون صحافی صدف نعیم کے حوالے سے وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ کا کہنا تھا کہ جاں بحق خاتون رپورٹر کے ساتھی صحافیوں کا بیان ہے کہ صدف کو دھکا دیا گیا۔
وفاقی وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ دھکا دینے والے شخص کو گرفتار کیا جائے، قانون کے تقاضے پورے کیے جائیں، اس شہادتی بیان کے بعد ضروری ہےکہ واقعے کی تحقیقات ہوں۔
رانا ثنا اللہ کا کہنا تھا کہ موقع پر موجود صحافیوں کے انکشافات کے بعد معاملہ مشکوک ہوگیا ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ پنجاب حکومت کی قانونی ذمہ داری ہےکہ ایک بےگناہ خاتون رپورٹر کی دردناک موت کی تحقیقات کرائے، پنجاب حکومت نے اپنی قانونی اور انسانی ذمہ داری پوری نہ کی تو وفاقی حکومت اپنا قانونی فرض ادا کرے گی۔
خیال رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے لانگ مارچ کے کامونکی جاتے ہوئے راستے میں عمران خان کے کنٹینر کے نیچے آکرنجی ٹی وی کی خاتون رپورٹر جاں بحق ہوگئیں۔
حادثے کے بعد عمران خان نے اپنے خطاب میں افسوس اور دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ افسوس ناک حادثے کے باعث آج ہم اپنے مارچ کو یہیں ختم کر رہے ہیں۔

مزید دیکھیں :   فوادچودھری کا 14 روز جوڈیشل ریمانڈمنظور، جیل بھیج دیاگیا