اشیائے خورد و نوش مہنگی

رمضان المبارک کی آمد : اشیائے خورد و نوش مہنگی

ویب ڈیسک:ملک میں رمضان المبار ک کی آمد سے قبل مہنگائی کی شرح میں اضافہ ، آلو انڈے،پیاز،ٹماٹر،بیف اورمٹن سمیت کئی اشیائے خوردو نوش مہنگی ہو گئیں،گرانی کی شرح میں1.11فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔
وفاقی ادارہ شماریات کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق ایک ہفتے کے دوران 14اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ، 14 کی قیمتوں میں کمی اور 23 اشیائے ضروریہ کی قیمتیں مستحکم رہیں۔
اعدادوشمار میں بتایا گیا ہے کہ حالیہ ایک ہفتے کے دوران ایل پی جی کی قیمتوں میں4.43 فیصد، پیاز 33.86 فیصد،انڈے 2.66 فیصد، آلو 23.81فیصد، ٹماٹر16.42فیصد،پٹرول 1.49فیصد،مٹن0.50فیصد اوربیف کی قیمتوں میں1.38فیصد اضافہ ہوا۔
اس کے برعکس چکن کی قیمتوں میں6.95فیصد،چائے کی پتی 1.29 فیصد،دال مسور 0.26فیصد، کوکنگ آئل 0.96فیصد، سادہ روٹی 0.51فیصد، لہسن کی قیمت میں 0.39فیصد،ویجیٹیبل گھی 0.23فیصد اورگڑ کی قیمتوں میں0.40فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔
اعدادوشمار میں بتایا گیا ہے کہ حالیہ ہفتے کے دوران حساس قیمتوں کے اشاریہ کے لحاظ سے سالانہ بنیادوں پر 17ہزار 732روپے ماہانہ تک آمدنی رکھنے والے طبقے کیلیے مہنگائی کی شرح 27.43فیصد رہی۔
اسی طرح 17ہزار 733روپے سے 22ہزار 888روپے ماہانہ تک آمدنی رکھنے والے طبقے کیلیے مہنگائی کی شرح 31.40فیصد، 22 ہزار 889روپے سے 29 ہزار 517روپے ماہانہ تک آمدنی رکھنے والے طبقے کیلے گرانی کی شرح 37.80فیصد ریکارڈ کی گئی۔
29 ہزار 518روپے سے 44ہزار 175 روپے ماہانہ تک آمدنی رکھنے والے طبقے کیلیے مہنگائی کی شرح 24.48فیصد رہی جبکہ 44 ہزار 176روپے ماہانہ سے زائد آمدنی رکھنے والے طبقے کیلیے گرانی کی شرح 28.70فیصد رہی۔

مزید پڑھیں:  پشاور پولیس کا شہر میں غیر قانونی تیزاب کی فروخت کے خلاف کارروائی کا مطالبہ