وفاقی وزیر خزانہ

پیٹرولیم مصنوعات پر سبسڈی دینےکے متحمل نہیں،وفاقی وزیر خزانہ

آئی ایم ایف کی شرط کے مطابق دوست ممالک سے4 ارب ڈالر حاصل کرنے کا انتظام کرلیا ہے، پیٹرولیم مصنوعات پر سبسڈی دینے کے متحمل نہیں اور نہ نقصان برداشت کرسکتے ہیں، وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل۔

ویب ڈیسک: نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر خانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتیں کم ہونے کے بعد وزارت خزانہ کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات پر کوئی ٹیکس لگے گا اور نہ لیوی میں کوئی اضافہ کیا جائے گا تاہم نقصان برداشت نہیں کرسکتے اور نہ ہی سبسڈی دینے کے متحمل ہیں۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ عالمی مالیاتی فنڈز ” آئی ایم ایف” نے قرض دینے سے پہلے چار ارب ڈالر کا بندوبست کرنے کی شرط عائد کی تھی، جس پر ہم نے دوست ممالک سے رابطہ کر کے اس رقم کا انتظام کرلیا ہے،
آئی ایم ایف کو کل تک لیٹر آف انٹینٹ پر دستخط کرکے بھیج دیں گے، ہم سب کو بیٹھ کر چارٹر آف اکانومی کرنا ہوگا۔
ایک سوال کے جواب میں مفتاح اسماعیل نے کہا کہ پیٹرولیم مصنوعات کے لیے ڈالرز دینے کی تصدیق سعودی عرب کرے تو زیادہ اچھا اور بہتر ہے میں اس پر زیادہ بات نہیں کروں گا۔

مزید دیکھیں :   پاپائے روم فرانس کی روس اور یوکرین سے تشدد اور موت کا سلسلہ بند کرنے کی اپیل