ایواسٹن انجیکشن

پنجاب حکومت نے امراض چشم کے ایواسٹن انجیکشن پر پابندی عائد کردی

پنجاب حکومت نے امراض چشم کےعلاج کیلئے ایواسٹن انجیکشن کے استعمال پر کوالٹی رپورٹ آنے تک دو ہفتے تک پابندی عائد کردی۔
ویب ڈیسک: نگران وزیر اعلیٰ پنجاب محسن نقوی کی زیر صدارت اجلاس میں امراض چشم کے ماہر ڈاکٹرز نے ایواسٹن انجیکشن سے بعض افراد کی بینائی متاثر ہونے کے واقعہ پر تفصیلی بریفنگ دی۔ اجلاس میں آشوب چشم کی وباء کی حفاظتی تدابیر اور سدباب کے اقدامات کا بھی جائزہ لیا گیا۔
بعد ازاں نگران وزیراعلیٰ پنجاب محسن نقوی نے ’ایکس‘ پیغام میں بتایا کہ محکمہ صحت کے حکام اور ماہرین امراض چشم کے ساتھ اویسٹن کی وجہ سے اندھے پن کے معاملے پر اجلاس میں اہم فیصلے کیے گئے ہیں۔
محسن نقوی کے مطابق اجلاس میں نان اسٹرلائیذڈ انجکشن کی دستیابی کے ذمہ دار ڈرگ انسپکٹرز کے خلاف فوری کارروائی اور امراض چشم کے علاج کیلئے مذکورہ انجکشن کے استعمال پر کوالٹی رپورٹ آنے تک پابندی لگانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔
نگران وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا ہے کہ انجیکشن کے وجہ سے اندھے پن کے شکار ہونے والے افراد کا مفت علاج کرایا جائے گا جبکہ معاملے کی تحقیقات کے لئے اعلی اختیاراتی کمیٹی تشکیل دینے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔ پولیس کو ذمہ دار عناصر کو گرفتار کرنے کا بھی حکم دے دیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں:  ناصر باغ :قیمتی اراضی پر قبضہ کرنے کی کوشش ناکام ‘ملزمان گرفتار